قیدیوں پر مظالم ناقابل برداشت:ملک

سرینگر// لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے تنظیم کے نائب چیف آرگنائزر سراج الدین میر،ضلع صدر بارہمولہ عبدالرشید مغلو اور عمر قید کی سزا کاٹ رہے فرنٹ قائد شیخ نذیر احمد کی اسیری کو طول بخشنے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔فرنٹ کے یہ تینوں قائدین کورٹ بلوال جیل میں مقید ہیں۔ سراج الدین میر اور عبدالرشید مغلو پر پبلک سیفٹی ایکٹ کا اطلاق کرکے انہیں کورٹ بلوال جیل منتقل کیا گیا ہے ۔ ان سیاسی قائدین کی گرفتاری اور انکی اسیری کو طول بخشنے کی حکومتی کاروائی کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے کہا کہ سراج الدین میر ایک 70برس کے بیمار انسان ہیں جبکہ عبدالرشید مغلو بھی حال ہی میں ایک بدترین حادثے کا شکار ہوئے تھے اور کئی ادویات لینے پر مجبور ہیں لیکن پولیس نے ان دونوں کو نہ صرف جیل میں ڈال دیا ہے بلکہ انہیں جموں منتقل کرکے مزید تکلیف میں ڈال دیا ہے۔اسی طرح فرنٹ کے ایک اور قائد شیخ نذیر احمد جو عمر قید کی سزا کاٹ رہے ہیں کو بھی سرینگر سے جموں منتقل کردیا گیا ہے اور ان کی صحت بھی کافی حد تک گرچکی ہے اور رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں بھی ان کا کوئی پرساں حال نہیں۔اس جبر و تشدد کی مذمت کرتے ہوئے لبریشن فرنٹ چیئرمین نے کہا کہ پولیس حکام کا یہی جابرانہ رویہ اور ہتک آمیز سلوک کشمیری بچوں کو پرتشدد تحریک کی جانب بھیج رہا ہے اور اس بات کا بین اعلان ہے کہ کشمیر میں کوئی سول حکومت نہیں بلکہ یہ ایک پولیس ریاست ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں بھارت کی جمہوریت اور ان کے بڑے بڑے دعاوی کی یہی اصلیت ہے اور یہی سب کچھ عرصۂ دراز سے کشمیر کے اندر عملایا جارہا ہے۔لبریشن فرنٹ کے چیئرمین نے رمضان کریم کے مہینے میں جاری جبر و تشدد اور ظلم کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایس او جی، پولیس، آرمی اور دوسری فورسز نے شبانہ چھاپوں ،گرفتاریوں اور گھروں کی حرمت پامال کرنے کا سلسلہ دراز کرتے ہوئے کولگام کے کئی علاقوں جن میں بدرو، مڈی بگ،یمبرچھ،کیموہ،کھڈونی اور آوورہ قابل ذکر ہیںنیز سرینگر کے علاقہ ٹینکی پورہ میںلوگوں کا جینا دوبھر کردیا ہے۔ شبانہ چھاپوں اور گرفتاریوں کو حکمرانوں،انکی پولیس اور سول انتظامیہ کی کشمیر و مسلم دشمنی کا شاخسانہ قرار دیتے ہوئے لبریشن فرنٹ چیئرمین نے کہا کہ رمضان میں جاری یہ کاروائیاں ہر حال میں مذموم ہیں۔دریں اثناء فرنٹ چیئرمین نے ڈوڈہ ضلع کی ایک سماجی شخصیت سعداللہ وانی کی وفات پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ گھٹ ڈوڈہ کے رہائشی سعداللہ وانی صاحب گزشتہ روز جموں میں انتقال کرگئے ہیں۔یہ عظیم الشان شخصیت قربانیوں اور جدوجہد کی مثال تھے اور دسمبر ۱۹۹۰؁ء میں جموں خطے میں اپنی نوعیت کے پہلے خونین واقعے جس میں افواج نے اندھا دھند فائرنگ کرکے ان کے تین بیٹوں اور ایک بیٹی کو جان بحق کیا تھا ۔ لبریشن فرنٹ کے چیئرمین نے مرحوم کیلئے جنت نشینی کی دعا کرتے ہوئے ان کے لواحقین کیلئے صبر جمیل و جزیل کی دعا بھی کی۔