قومی سلامتی کیلئے کوئی بھی سخت فیصلہ لینگے

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے پاکستان کا نام لئے بغیرسخت انتباہ دیتے ہوئے کہا کہ ہندوستان نے دفاع کے میدان میں اپنی صلاحیت میں اضافہ کیا ہے اور قومی سلامتی کے لئے وہ کوئی بھی اقدام کرنے سے پیچھے نہیں ہٹے گا۔ مودی نے دہلی چھاؤنی میں واقع کرِپَّا پریڈ گراؤنڈ میں این سی سی یوم جمہوریہ کیمپ کے اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک نے معیشت اور دفاع کے میدان میں اپنی اہلیت میں اضافہ کیا ہے ۔ فوج نے سرحد پار کی گئی سرجیکل اسٹرائک کا بالواسطہ طور پر ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہندوستانی فوج نے دشمن کو سخت پیغام دیتے ہوئے واضح کر دیا ہے ۔‘ ہم کسی کو چھیڑتے نہیں ہیں، لیکن چھیڑا تو چھوڑتے نہیں ہیں’۔انہوں نے کہا کہ قومی سلامتی کے لیے ضروری ہونے پر اور بھی سخت فیصلہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان امن کا سخت ترین حامی ہے لیکن قومی سلامتی کے ساتھ کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور اس بابت ہم کوئی بھی قدم اٹھانے میں جھجھک نہیں کریں گے ۔حکومت قومی سلامتی کے معاملے میں سخت فیصلے کرتی رہے گی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان دنیا کے ان چنندہ ممالک میں شامل ہو گیا ہے جوفوج ، بحریہ اور فضائیہ، تینوں جگہ سے ایٹمی حملے اور اپنی حفاظت کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔