قدیم شارداپیٹھ مندر کی یاترا | کرتارپور راہداری طرز پرٹیٹوال سے راستہ کھولنے کامطالبہ

 کپوارہ // حد متارکہ کے نزدیک ٹیٹوال علاقہ میں شاردا یاترا بیس کیمپ مندر اور مرکز کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد سیو شاردا کمیٹی کشمیر نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ ٹیٹوال سے شاردا پیٹھ تک جو پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں ہے ،کرتارپور راہداری طرز پر راستہ کھولا جائے تاکہ یاتری قدیم شاردا پیٹھ مندر جا کر وہاں کی یاتراکر سکیں ۔ یاد رہے کہ تقسیم کے بعد پہلی بار  پنڈتوں کے قدیم ورثے اور مذہبی مقام کو دوبارہ بحال کرنے کے لئے ٹیٹوال سرحد کے بالکل قریب جگہ دوبارہ حاصل کر کے وہاں ایک شاردا یاترا بیس کیمپ مندر اور ایک گرودوارہ تعمیر کیا  جا رہا ہے۔ اس قدیم مذہبی مقام کو دوبارہ بحال کرنے کے کام کے لئے ایک کمیٹی بھی تشکیل دی گئی ہے جس میں مقامی مسلمان بھی شامل ہیں، جبکہ اس کی نگرانی اور سربراہی سیو شاردا کمیٹی کشمیر کے بانی اور صدر رویندر پنڈتا کر رہے ہیں۔