قدرتی آفات سے نمٹنے کی تیاریاں

جموں//ڈیزاسٹر منیجمنٹ اور باز آباد کاری کے سیکریٹری فاروق احمد شاہ نے ڈپٹی کمشنروں کو ہنگامی بنیادوں پر سبھی اضلا ع میں ایمرجنسی اوپریشن سینٹر قائم کرنے کی ہدایت دی تاکہ قدرتی آفات سے موثر طور نمٹاجاسکے۔اُنہوں نے کشمیر ڈویژن کے ڈپٹی کمشنروں کی طرف سے داخل کئے گئے ضلع سطحی ڈیزاسٹر منیجمنٹ ایکشن پلان کے جائزے کے دوران یہ احکامات دئیے۔میٹنگ میں ایکشن پلان کے علاوہ ان مراکز کے قیام کے لئے اراضی کی نشاندہی جیسے امور کا جائزہ لیا گیا۔سیکرٹری نے ان مراکز میں فسٹ ایڈ ، پانی کی نکاسی کے پمپ ، جے سی بی اور دیگر سازو سامان ہمیشہ تیاری کی حالت میں رکھنے کے علاوہ ان مراکز میں سٹیلائٹ فون دستیاب کرانے کے احکامات دئیے۔انہوں نے ڈپٹی کمشنروں کو متعلقہ اضلاع میں انتہائی نگہداشت والی ایمبولنس گاڑیاں دستیاب کرانے کے بھی احکامات دئیے۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ ڈپٹی کمشنروں کی تحویل میں پہلے ہی ایس ڈی آر ایف ضوابط کے تحت فی کس ساڑھے پانچ کروڑ روپے رکھے گئے ہیں جبکہ ایس ڈی آر ایف کے ضوابط کے تحت ہی فوری ریلیف کے عوض ڈپٹی کمشنروں کی تحویل میں 10کرو ڑ روپے رکھے گئے ہیں۔اُنہوں نے ڈپٹی کمشنروں کو لگاتار ڈیزاسٹر منیجمنٹ سے متعلق تیاریوں کا جائزہ لیتے رہنے کی تلقین کی۔بعد میں انہوں نے نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے ممبر کمل کشور کے ساتھ ایک ویڈیو کانفرنسنگ بھی کی جس میں ڈیزاسٹر ریسپارنس سے متعلق کمیونٹی رضاروں کی تربیت ، نیشنل سکول سیفٹی پروگرام اور ڈیزاسٹر رِسک پروگراموں کی عمل آوری پربھی تبادلہ خیال ہوا۔ میٹنگ میں بتایاگیا کہ ریاست کے لئے ان رضاکاروں کی تربیت کے لئے 22.70لاکھ روپے واگزار کئے گئے ہیں۔