قالینوں پر جی ایس ٹی کی شرح 5 فیصد کئے جانے کا امکان

 سرینگر//جی ایس ٹی کونسل آئندہ میٹنگ کے دوران قالینوں میں ممکنہ طور پر اشیاء و خدمات ٹیکس12فیصد سے گھٹا کر5فیصد کرے گی۔اتر پردیش اور جموںو کشمیر میں بڑے پیمانے پر قالین صنعت کے یونٹ بند ہونے کی رپورٹوں کو مد نظر رکھتے ہوئے جی ایس ٹی کونسل امکانی  طور پر قالینوں کو5فیصد اشیاء و خدمات ٹیکس کے دائرے میں لائے گی۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق گوہاٹی میں جس ایس ٹی کونسل کی میٹنگ کے بعد ریاستی وزیر خزانہ ڈاکٹر حسیب درابو نے کہا’’ یہ تقریباً بند ہونے کے دہانے پر ہے۔اتر پردیش میں بڑے پیمانے پر یہ بند ہوئے ہیں،اور ہماری صنعت بھی دبائو کا سامنا کر رہی ہے،کوئی بھی نہیں چاہتا کہ ثقافتی اشیاء  یا مصنوعات اس طرح ختم ہو،اور مجھے اس بات کی قومی امید ہے کہ جی ایس ٹی کونسل اس سلسلے میں فیاضی سے کام لیکر دست کاری میں مزید لچک پیدا کرے گی‘‘۔ ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے میڈیا رپورٹوں میں کہا گیا ہے کہ قالینوں پر عائد جی ایس ٹی کی موجودہ شرح ٹیکس کم کر کے5فیصد تک لایا جائے گا،جس کو ایک اعتدال پسندانہ ٹیکس کے زاویہ سے دیکھا جاسکتا ہے،اور اس سے صنعت کی بحالی بھی متوقع ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ تجویز مرکز کے پاس کئی ہفتوں سے زیر غور ہے،اور اب اس میں صرف فیصلہ لینا ہی باقی ہے۔