فوجی اہلکاروں کا فاصلاتی تعلیم میں داخلہ

سرینگر//وادی میں تعینات فوجیوں کو فاصلاتی تعلیم فراہم کرنے کی غرض سے فوج نے کشمیر یونیورسٹی کے ساتھ پیر کو ایک یاداشت پردستخط کئے۔ کشمیر یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسرطلعت احمد اور فوج کی طرف سے چنار کور کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل ڈی پی پانڈے نے معاہدے پر دستخط کئے۔ دفاعی ترجمان کے مطابق یہ کشمیر یونیورسٹی اورچنار کور کیلئے ایک تاریخی دن تھااوردونوں نے وادی میں موجودفوجی اہلکاروں کو فاصلاتی تعلیم فراہم کرنے کیلئے طویل المدتی رشتہ قائم کیا ہے ۔معاہدے کے تحت فوجی اہلکار جوکشمیرمیں تعینات ہیں،یونیورسٹی کے فاصلاتی تعلیم کے شعبے سے مختلف کورسوں میں داخلہ پانے کے قابل ہوں گے۔ دفاعی ترجمان کے مطابق فوجی اہلکاروں کو چھ ماہ کے سرٹیفیکیٹ کورس کے علاوہ ایک سال کے ڈپلومہ کورس اور دوبرس کے پوسٹ گریجویٹ کورس میں داخلہ دیاجاسکے گا۔انہوں نے کہا کہ فی الوقت فوجی اہلکاروں کو 18کورسوں میں داخلہ مل سکے گا جواس وقت دستیاب ہیں اوران کی تعداد کو آگے بڑھایا جائے گا۔معاہدے پر رسمی طوردستخط کئے جانے کے بعد یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسر طلعت احمدنے یونیورسٹی کے بنیادی اصولوں پرزوردیااورکہا کہ اس معاہدے سے کشمیر میں تعینات فوجیوں کو فائدہ پہنچے گا۔ جنرل پانڈے نے کہا کہ کشمیر یونیورسٹی اپنے بیش بہاورثہ،تمدن اور ماہرین تعلیم کے ذریعے  چنار کور فوجی اہلکاروں اورسول ڈیفینس اہلکاروں کو اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کیلئے موقعہ فراہم کرے گی۔