غیر قانونی بجلی کنکشن 31اکتوبر تک باقاعدہ بنائے جائیں

سرینگر//صوبائی کمشنر کشمیر بصیر احمد خان نے لیہہ اور کرگل سمیت وادی کے تمام اضلاع کے ترقیاتی کمشنروں کو سوبھاگیہ سکیم کے تحت 31اکتوبر تک سارے غیر قانونی بجلی کنکشنوں کو باقاعدہ بنانے کی ہدایت دی ہے۔صوبائی کمشنر نے یہ ہدایات کل مرکزی معاونت والی سوبھاگیہ سکیم کی پیش رفت کا جائزہ لینے کے لئے دوران دیں۔اس سکیم کے دائرے میں شہری اور دیہی علاقوںکو لایا جارہا ہے۔سوبھاگیہ کے تحت خط افلاس سے نیچے گذر بسر کرنے والے کنبوںکو مفت بجلی کنکشن فراہم کئے جائیں گے۔البتہ ایس ای سی سی ڈیٹا کے دائرے میں نہ آنے والے کنبوں کو سکیم کے تحت 5سو روپے کی ادائیگی کے بعد بجلی کنکشن فراہم کئے جائیں گے۔جوکہ اُن سے بجلی بِلوں کے ادائیگی کے دوران 10قسطوں میں وصول کئے جائیں گے۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ سوبھاگیہ سکیم کے تحت پی ڈی ڈی نے وادی بھر میں اب تک 162658بجلی کنکشنوں میں سے85000کنکشن باقاعدہ بنائے ہیں۔تمام ضلع انتظامیہ کو صوبائی کمشنر کے دفتر میں ہفتہ وار بنیادوں پر پیش رفت کے بار ے میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی گئی۔میٹنگ میں چیف انجینئر پی ڈی ڈی اوراسسٹنٹ کمشنر کے علاوہ دیگر متعلقہ آفیسران بھی موجود تھے۔جب کہ لداخ اورکرگل سمیت تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے میٹنگ میں شرکت کی۔