غزہ میں قتل عام کا سلسلہ جاری | ایک ہی خاندان کے 6افراد لقمہ اجل

یو این آئی

غزہ// اسرائیل عید کے موقع پر بھی غزہ میں قتل عام سے باز نہیں آیا۔7 اکتوبر سے اب تک 37 ہزار 300 سے زائد فلسطینیوں کو جاں بحق کرنے والی اسرائیلی فوج نے ایک بار پھر غزہ پر بمباری کی۔اسرائیل کے غزہ کے شیخ رضوان محلے پر حملے میں ایک ہی خاندان کے 6 افراد جان کی بازی ہار گئے۔بتایا گیا ہے کہ مرنے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔اسرائیلی فورسز نے رفح کے شمال مغرب میں بے گھر فلسطینیوں کے خیموں پر بھی بمباری کی۔حملوں کے بعد خیموں میں آگ بھڑک اٹھی۔بمباری کے نتیجے میں کم از کم 7 فلسطینی شہید اور درجنوں زخمی ہو گئے۔بتایا گیا ہے کہ اسرائیل نے خان یونس شہر اور نصرت پناہ گزین کیمپ پر بھی حملہ کیا۔غزہ میں تباہ کاریوں کی شدت بڑھ رہی ہے۔اقوام متحدہ کے ماحولیاتی پروگرام نے غزہ پر اسرائیل کے حملوں کے ماحولیاتی اثرات پر ایک رپورٹ شائع کی۔رپورٹ میں ماحولیات پر حملوں کے اثرات کو “بے مثال سطح پر” قرار دیا گیا ہے۔بتایا گیا کہ رہائشی علاقوں پر اسرائیل کے حملوں سے 39 ملین ٹن ملبہ سامنے آیا ہے۔اس بات پر زور دیا گیا کہ یہ مقدار غزہ کے ہر مربع میٹر کے لیے 107 کلو گرام ملبے کے مساوی ہے۔