عید الفطر کی تقریب سعید آج

بلال فرقانی
سرینگر// دو سال کے بعدآج جموں کشمیر سمیت بر صغیر ہندو پاک میں عید الفطر بغیر کووڈ بندشوں کے منائی جارہی ہے۔ جموں وکشمیرمیں نماز عید کاسب سے بڑا اجتماع آثار شریف درگاہ حضرتبل سری نگرمیں منعقد ہوگا ،جہاں نماز عیدالفطر صبح ساڑھے10بجے اداکی جائے گی ۔تاریخی عیدگاہ اورمرکزی جامع مسجد سرینگرمیں نماز عیدکے اجتماعات منعقد نہیںہورہے ہیں۔ وادی کے دیگر علاقوں میں معمول کے مطابق نماز عید کے اجتماعات کا اہتمام کیا جارہا ہے۔2020اور 2021میں کورونا کی بندشوں کی بدولت نماز عیدین کے بڑے اجتماعات منعقد نہیں ہوسکے تھے۔ادھر برصغیرہندوپاک کے بیشترعلاقوںمیں عیدالفطرکی تقریب سعید انتہائی عقیدت واحترام اورتزک واحتشام کیساتھ منائی جارہی ہے۔اتوار کی شام برصغیر میں شوال کا چاند نظر نہیں آیا تھا، جس کے بعد عید الفطر 3مئی بروز منگل ہونے کا اعلان کیا گیا۔خیال رہے سعودی عرب سمیت خلیجی ممالک اوردیگرکئی ملکوں میں سوموارکوعیدالفطرمنائی گئی۔ افغانستان اور پاکستان کے ایک صوبے میں بھی پیر کو عید الفطر منائی گئی۔وادی اور جموںکے سبھی 20 اضلاع میں نمازعیدکے عظیم الشان اجتماعات ہورہے ہیں۔ جموں شہر کے اکثریتی علاقوں کے علاوہ راجوری ، پونچھ ، ڈوڈہ ، بھدرواہ، کشتواڑ،بانہال اور رام بن،راجوری ، پونچھ ،اور کرگل میں بھی عظیم الشان اجتماعات کا انعقاد ہو گا جن میں لاکھوں فرزندان توحید شرکت کریں گے۔وادی کے دوسرے بڑے شہروں اور قصبوں میں بھی عید جوش و جذبے کیساتھ منائی جارہی ہے۔مساجد و خانقاہوں میں بڑے بڑے اجتماعات ہورہے ہیں اور فرزندان توحید نے سربسجود ہو کر بارہ گاہ الٰہی کا شکر ادا کیا جائیگا۔عالم انسانیت امن ترقی خوشحالی کیلئے خصوصی دعائیں مانگی جائیگی۔

 

 

لیفٹیننٹ گورنر کی مبارک باد 

نیوز ڈیسک

 

جموں//لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے عید الفطرکے موقعہ پر جموںوکشمیر کے لوگوں کو مبارک باد دی ہے۔اَپنے مبارک بادی کے پیغام میں لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ عید کا تہوار بانٹنے کی خوشی کو اُجاگر کرتا ہے ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ عید الفطر ماہ رمضان المبار ک کے مقدس مہینے میں روزے کی مدت کے اختتام کی نشاندہی کرتی ہے اور سب کو ایک ہمدرد ، ہم آہنگی ، پُر امن اور خوشحال معاشرے کی تعمیر کے لئے کام کرنے کی ترغیب دیتی ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا ،’’ یہ مبارک دِن باہمی خیر سگالی کو مضبوط کرے اور ہم میں اتحاد اور جموںوکشمیر یوٹی کے ہم آہنگ کلچر میں فکر کا احساس پیدا کرے۔‘‘