عوامی احتجاج رنگ لایا

ترال//سرکار نے ترال کے لوگوں کی ناراضگی کو ختم کر کے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کو تعینات کرنے کے علاوہ دیگر کئی اہم مطالبات کو منظوری دی ہے۔سرکاری کی جانب سے بدھ کو ایک حکمنامے میں ترال میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کو مستقل طور تعیناتی کے احکامات صادر کئے ہیںجبکہ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ علاقے کے لئے ایس ڈی ایچ کو ماڈل ہسپتال بنانے اور علاقے کو منی سکریٹریٹ کا درجہ دینے کی بھی منطوری دی گئی ہے جس پر مقامی آبادی نے بڑی پیمانے پر فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے سیول سوسائٹی ترال اور مقامی میڈیا کا شکریہ ادا کیا ہے جنہوں نے گزشتہ جمعہ کو ایک پریس کانفرنس میں ترال کو مسلسل نظر انداز کرنے اورعلاقے سے اہم دفاتر کو باقی مقامات پرمنتقلی کے خلاف علاقے میں غیر معینہ مدت کا ہڑتال اور عدالت کا دروازہ کھٹکھٹانے کا علان کیا تھا جس کے حوالے سے دو روز قبل کشمیر عظمیٰ میں خبر بھی شائع ہوئی تھی۔جہاں سرکار نے سول سوسائٹی کی جانب سے پہلی ہی میمورنڈم میں پیش کئے گئے مطالبات کو منظور دیکر پہلی بار آبادی کے دل جیت لئے ہیںہے۔