عام اِنتخابات2019 ۔۔۔ پانچویں مرحلہ کی مہم اختتام پذیر

 شوپیان// 6مئی کو شوپیان، پلوامہ اضلاع اور لیہہ پارلیمانی حلقے میں انتخابی مہم سنیچر کی شام اختتام کو پہنچی۔ شوپیان اور پلوامہ اضلاع انتہائی حساس ہیں اور یہاں آئے روز جنگجوئوں اور فورسز کے مابین مسلح جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں۔ جمعہ کو ہی شوپیان کے نزدیک تین جنگجو جاں بحق ہوئے جبکہ پر تشدد تصادم آرائیوں میں 20کے قریب افراد زخمی ہوئے۔6 مئی کو آخری مرحلے کے تحت مجموعی طور پر 6.97لاکھ رائے دہندگان اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں گے۔آخری مرحلے میں اننت ناگ پارلیمانی حلقے کے پلوامہ و شوپیاں اضلاع اورلداخ پارلیمانی حلقہ میں لگ بھگ 697,148 رائے دہندگان اپنے ووٹ کا استعمال کریںگے۔ انتخاب میں احسن طریقے پر اِنتخابی عمل یقینی بنانے کے لئے الیکشن کمیشن نے اِن علاقوں میں 1254پولنگ مراکز قائم کئے ہیں۔

پلوامہ شوپیان

اننت ناگ پارلیمانی حلقہ کیلئے تیسرے مرحلے کے انتخابات کے آخیر پر پلوامہ اور شوپیاں اضلاع میںاِنتخابات ہونے جارہے ہیں۔ پلوامہ اور شوپیاں کے دو اضلاع 6اسمبلی حلقوں پر محیط ہیں ۔جن میں ترال ، پانپور ، پلوامہ ، راجپورہ ،وچی اور شوپیاں علاقے شامل ہیں ۔ان اضلاع میں انتخابات احسن طریقے پر منعقد کرنے کے لئے 695پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔اِن اضلاع میں 522,530 رائے دہندگان ہیں جن میں 271,127 مرد ، 250,735خواتین ،657سروس ووٹر ( 646مرد اور 11 خواتین ) کے علاوہ 11 خوا جہ سرا شامل ہیں۔پلوامہ ضلع میں 351,314رائے دہندگان ہیں اور ضلع بھر میں 450پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں ۔اسی طرح شوپیاں ضلع میں 171,216رائے دہندگان ہیں اورضلع بھر میں 245 پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔جو اُمیدوار چناوی دوڑ میں ہیں اُن میں نیشنل کانفرنس کے حسنین مسعودی ، بھارتی جنتا پارٹی کے صوفی یوسف ، انڈین نیشنل کانگریس کے غلام احمد میر، پی ڈی پی کی محبوبہ مفتی ، نیشنل پینتھرس پارٹی کے نثار احمد وانی، پیپلز کانفرنس کے چودھری ظفر علی ، مانو ادھیکار پارٹی کے سنجے کمار دھر ، پرگتی شیل سماج وادی پارٹی ( لوہیا ) کے سریندر سنگھ اور آزاد امید وار امتیاز احمد راتھر، رضوانہ صنم ، ریاض احمد بٹ، زبیر مسعودی ، شمس خواجہ ، علی محمد وانی ، غلام محمد وانی ، قیصر احمد شیخ ، منظور احمد خان اور مرزا سجاد حسین بیگ شامل ہیں۔اننت ناگ پارلیمانی حلقہ کے اننت ناگ اور کولگام اضلاع میں 23؍ اپریل اور 29؍ اپریل کو اِنتخابات منعقد ہوئے۔اِن اضلاع میں ووٹنگ صبح 7بجے سے سہ پہر 4بجے تک ہوگی۔

لداخ

لداخ پارلیمانی حلقے میں دو اضلاع لیہہ اور کرگل شامل ہیں ۔ کرگل ضلع کے دو اسمبلی حلقے کرگل اور زانسکار جبکہ لیہہ ضلع کے نوبرااور لیہہ اسمبلی حلقو ں پر مشتمل ہے۔لداخ حلقہ انتخاب میں 174,618ووٹر ہیں ان میں سے 86,752مرد ،85,064خواتین ،2799سروس ووٹر ( 2755مرد اور 44خواتین ) کے علاوہ تین خواجہ سرا شامل ہیں۔ پورے حلقے میں 559پولنگ مراکز قائم کئے ہیں ۔کرگل ضلع کے 87,781رائے دہندگان اور لیہہ ضلع کے 86,827 رائے دہندگان ہیں۔الیکشن حکام نے ضلع بھر میں انتخابات احسن طریقے منعقد کرنے کے لئے 294پولنگ مراکز قائم کئے ہیں۔ ای سی آئی نے لیہہ ( گائیک) اور نوبرا ( واشی) حلقوں میں دو پولنگ مراکز قائم کئے ہیں جہاں صرف 7رائے دہندگان موجود ہیں جبکہ لیہہ ( شینام)جہاں سب سے زیادہ 1301رائے دہندگان موجود ہیں میں بھی پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔اَنلیفو( چانگ تھانگ ) جو لیہہ ضلع کا سب سے زیادہ 15,000فٹ اونچائی پر واقع پولنگ مرکز قائم کیا گیا ہے۔یہ مرکز ایل اے سی سے صرف 50میٹر کی دوری پر قائم کیا گیا ہے۔جن اُمید وار وں اِن انتخابات میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا ہے اُن میں انڈین نیشنل کانگریس ( آئی این سی ) کے ریگزن سپالبار ،بی جے پی کے جمیانگ ژیرنگ نمگیال اور آزاد اُمیدوار اصغرعلی کربلائی اور سجاد حسین شامل ہیں۔اِس حلقہ اِنتخاب کے لئے ووٹر ڈالنے کا وقت صبح 7بجے سے شام 6بجے تک مقرر کیا گیا ہے۔