عالمی بنک کی امداد کے باوجود وائل پل کی تعمیرکھٹائی میں

گاندربل//سرینگر لیہ شاہراہ پر وائل کے مقام پر دریا سندھ پر لوہے کے بنے ہوئے پل کے قریب گزشتہ سال اکتوبر میں ورلڈ بینک کی جانب سے 23کروڑ روپے کی رقم فراہم کرنے کے بعد دو طرفہ پل کی تعمیر شروع کی گئی تھی اور ضلع انتظامیہ کو تعمیر ہورہے اس پل کے دونوں اطراف میں موجود مقامی لوگوں کی ملکیتی اراضی کی  پی این سی رپورٹ مرتب کرنے کے بعد ورلڈ بینک کو روانہ کرنی تھی جس کے لئے 30جون 2021کی ڈیڈ لائن مقرر کی گئی تھی تاہم 30جون 2021کو ضلع انتظامیہ کی جانب سے رپورٹ مرتب کرکے ورلڈ بینک کو بھیجنے میں ناکامی کے بعد ورلڈ بینک نے ڈیڈ لائن میں دس دن کی توسیع کردی جس کے بعد 10جولائی آخری مہلت دی گئی۔اگر رپورٹ روانہ نہیں کی گئی توپل کا کام کٹھائی میں پڑسکتاہے جس کا خمیازہ عوام کو بھگتنا پڑے گا۔سرینگر لیہ شاہراہ پر وائل کے مقام پر دریا سندھ پر بنا ہوا لوہے کا یکطرفہ پل ہزاروں لوگوں کے لئے باعث عذاب بنا ہوا ہے۔ اس پل پر روزانہ گھنٹوں ٹریفک جام لگ جانے سے عوام کو منزل مقصود تک پہنچنے میں کافی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔