عائشہ بنیں گی پاکستانی سپریم کورٹ کی پہلی خاتون جج ، جے سی پی سے منظوری

اسلام آبا//پاکستان جوڈیشیل کمیشن(جے سی پی) نے لاہور ہائی کورٹ کی جج عائشہ اے ملک کو ملک کی سپریم کورٹ میں ترقی کو منظوری دے دی ہے، جس کے بعد وہ عدالت عظمیٰ میں پاکستان کی پہلی خاتون جج بن جائیں گی۔ ڈان اخبار نے جمعہ کو یہ رپورٹ دی ہے۔
محترمہ ملک کی ترقی کو جے سی پی نے جمعرات کو منظوری دی۔ چیف جسٹس گلزار احمد کی صدارت والے پاکستان جوڈیشیل کمیشن نے ان کی تقرری کو اکثریت کی بنیاد پر (چار کے مقابلے پانچ ووٹ) منظوری دی۔
یہ دوسری بار ہے جب جے سی پی نے جج ملک کی ترقی پر فیصلہ کرنے کے لیے میٹنگ کی۔ گزشتہ برس9 ستمبر کو جے سی پی کی ایک میٹنگ کے دوران اتفاق رائے نہ بن پانے کے سبب کمیشن کو ان کی ترقی کو نامنظور کرنے پر مجبور ہونا پڑا تھا۔
جج ملک کے پرموشن کی پاکستان بار کونسل (پی سی بی)نے بھی مخالفت کی تھی۔ پی سی بی نے مخالفت کرتے ہوئے کہا تھا کہ کئی سینئر ججوں کو درکنار کرکے ان کو ترقی دی جارہی ہے۔ انہوں نے یہ بھی انتباہ دیا تھا کہ اگر جے سی پی کی میٹنگ کو منسوخ نہیں کیا گیا تو پی بی سی اور سبھی بار ایسوسی ایشن اعلیٰ عدالتوں سے لے کر نچلی عدالتوں تک تمام عدالتی کارروائیوں کا بائیکاٹ کریں گی۔