طبی جانچ کیلئے لازمی آلات کا فقدان:ڈاک

سرینگر //ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کشمیر نے کہا ہے کہ وادی میں سرکار ی اسپتالوں میں ضروری سازوسامان مثلاً کی کمی ہے۔ ڈاکٹرنثار الحسن نے کہا کہ مریض ان ہی لازمی آلات کی عدم دستیابی کی وجہ سے مشکلات کے شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مریضوں کو مذکورہ تشخیصی ٹیسٹوں کیلئے یا تو نجی کلنکوں یا پھر بیرون ریاست جانا پڑتا ہے جس کا خرچہ غریب مریض نہیں اٹھا پاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسپتالوں میں ضروری ساز و سامان کی کمی کی وجہ سے ڈاکٹر مریضوں کے علاج سے سمجھوتہ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ٹھیک نہیں ہے کہ اسپتالوں کو ایسی ضروری آلات کی سے محروم رکھا جائے کیونکہ جدید دور میں ڈاکٹر ان ضروری آلات کے بغیر کام نہیں کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فائبرو ویکسین جگہ کو پہنچے نقصان ، بیماری پر نظر رکھنے اور جگہ کی بیماری میں مبتلا مریضوں کے زندگی کے بارے میں پیشن گوئی کرنے میں مدد دیتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر Hepatitis Bاور Hapititis Cکی بیماری کی چپیٹ میں ہے اور فائبرویکسین مریضوں میں بیماری کا پھیلائو اور علاج کی ترجیحات کا پتہ لگانے میں انتہائی اہم رول ادا کرسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کیونکہ جگر کی بیماریوں کا مرکز بنا ہوا ہے اور فائبرو یکسین جگر کی بیماریوں کو ابتدائی سطح پر نشاندہی کرنے میں مدد گار ثابت ہوسکتا ہے اور بیماری کو پھیلانے سے بچانے میں بھی مدد گار ثابت ہوسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ DEXA ویکسین ہڈیوں کے بیماریوں کا پتہ لگانے میں مدد گار ثابت ہوتا ہے اور یہ ہڈیاں پتلی اور کمزور ہونے کی صورت میں علاج و معالجے میں بھی ڈاکٹروں کی رہنمائی کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری سماج میں ہڈیوں کی بیماریاں کافی تیزی سے پھیل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ “Endoscopic ultrasound  آنت ، سانس کی بیماریوں کے علاوہ کینسر کا پتہ لگانے میں بھی انتہائی اہم رول ادا کرتا ہے۔