طاقت کا استعمال منفی سوچ

سرینگر//سینئر کانگریس لیڈر اور سابق مرکزی وزیر پروفیسر سیف الدین سوز نے گورنر ستیہ پال ملک کو ریاست جموں وکشمیر میں طاقت کی پالیسی اپنائے جانے کا حامی ہونے کا الزام عائد کیا ہے ۔سوز نے کہاکہ گورنر ستیہ پال مالک نے عہدہ سنبھالتے ہی دعوی کیا تھا کہ وہ سیاسی جماعتوں اور دوسرے لوگوں کے ساتھ براہ راست گفتگو کا راستہ کھولیں گے ۔ مگر ابھی تک وہ ایسا نہیں کر سکے !اب گورنرموصوف کشمیر میں طاقت استعمال کرنے کے حق میں ہیں اور آئے دن طاقت کے استعمال کو ہی صحیح مانتے ہیں۔سوز نے کہاکہ میرے خیال میں گورنر موصوف کو سوچنا چاہیے کہ کیا حکومت ہند کیٔلے یہ بات فایٔدہ مند ہوسکتی ہے کہ وہ ناراض کشمیریوں کو لگاتار دہشت گرد قرار دیتے رہیں؟ خود ہندستان کی سول سوسایٔٹی اور بین الاقوامی راے عامہ کشمیریوں کو دہشت گرد نہیں مان سکتی؟سابق سینیرآرمی افسروں اور آج کے کمانڈروں نے ہندوستان کے اعلی ایوانوں تک اپنی یہ راے پہنچائی ہے کہ کشمیر میں سیاسی مسلہ حل کرنے کے لیے صرف سیاسی ڈاییٔلاگ ہی کار آمد ہتھیار ہے۔ انہوں نے کہاکہ  متحدہ مزاحمتی قیادت (JRL) کے ساتھ جتنا جلد حکومت ہندڈیٔلاگ شروع کیا جائے۔