ضلع ہسپتال ہندوارہ میں جگہ کی کمی سے مریضوں کو مشکلات نئی عمارت کو فعال بنانے کی حکام کی یقین دہانی ابھی تک رنگ نہ لائی

اشرف چراغ

کپوارہ// ضلع ہسپتال ہندوارہ میں جگہ کی کمی کی وجہ سے مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔مذکورہ ہسپتال کی اہمیت اس لحاظ سے بھی ہے کیونکہ پورے ضلع کے مریضوں کا دبائو اسی ہسپتال پر ہے ۔ضلع اسپتال ہندوارہ جو گورنمنٹ میڈیکل کالج ہندوارہ سے منسلک ہسپتال ہے ،کے مختلف او پی ڈی اور ایمرجنسی وارڈ وںمیں آنے والے مریضوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہسپتال کی موجودہ عمارت میں جگہ کی سخت کمی ہے جس کی وجہ سے متعدد کمرے اور او پی ڈیز بشمول ایمر جنسی ،گائنی سیکشن اور دیگر شعبہ جات میں بھیڑ رہتی ہے اور اس وجہ سے اسپتال میں شور کی وجہ سے مریضوں کو کافی تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔معلوم ہوا ہے کہ ہسپتال کی نئی عمارت پر گزشتہ 7سال سے کام چل رہا ہے اور عمارت کا بیشتر حصہ مکمل بھی ہو چکا ہے لیکن ابھی تک اس نئی عمارت کو فعال نہیں بنایا گیا ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ ہندوارہ میں سالہا سال سے ضلع اسپتال قائم ہے اور یہ اسپتال پورے ضلع بشمول کرناہ ،کیرن ،مژھل ،کرالہ پورہ ،جمہ گنڈ ،راجواڑ ،بڈنمل ،لولاب اور دیگر علاقوں کے لوگو ں کی واحد امید ہے اور دن بھر سینکڑوں مریض اپنا علاج و معالجہ کرانے کے لئے ضلع اسپتال ہندوارہ آتے ہیں جبکہ ضلع کے دیگر اسپتالوں سے بھی مریضوں کو ایمرجنسی کے دوران ضلع اسپتال ہندوارہ منتقل کیا جاتا ہے ۔لوگو ں کا کہنا ہے کہ اسپتال میں جگہ کی کمی کی وجہ سے مریضوں کا ابتدائی طور علاج تو کیا جاتا ہے لیکن بعد میں بارہ مولہ یا سرینگر منتقل کیا جاتا ہے ۔صورتحال کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ مذکورہ اسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں محض 14بیڈ ہیں اور جب مریضوں کی تعدادزیادہ ہوتی ہے تو ایک ایک بیڈ پر دو دو مریضوں کو رکھا جاتا ہے جو ایک المیہ ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ اسپتال میں ماہر ڈاکٹر اور نیم طبی عملہ تو موجود ہیں اور جدید مشینری بھی نصب ہے لیکن جگہ کی کمی کی وجہ سے ہسپتال میں علاج و معالجہ کرنے والے مریضوں کو دقتو ں کا سامنا کرنا پڑتا ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے موجود ہ ضلع ترقیاتی کمشنر نے انہیں جولائی کے مہینے میں یقین بھی دلا یا تھا کہ اسپتال کی نئی عمارت کو فعال بنانے کے لئے مناسب اقدامات کئے جائیں گے لیکن ابھی تک معاملہ جو ں کا تو ں ہے ۔مقامی لوگو ں نے ضلع انتظامیہ سے پھر مطالبہ کیا کہ وہ ضلع اسپتال ہندوارہ کی نئی عمارت کو فعال بنانے میں اپنی دلچسپی کا مظاہرہ کریں تاکہ آنے والے موسم سرما میں لوگو ں کو کسی بھی مشکلات کاسامنا نہ کرنا پڑے ۔