ضلع رام بن کے بیشتر دیہات بجلی اور سڑک رابطوں سے منقطع

 بانہال // ضلع رام بن کے بانہال ، کھڑی ، نیل ، پوگل پرستان اور گول سنگلدان  کے درجنوں دیہات بھاری برفباری کی وجہ سے بجلی اور سڑک رابطوں سے منقطع ہوکر رہ گئے ہیں اور معمولات کی زندگی درہم برہم ہوکر رہ گئی ہے۔ رام بن کے بیشتر علاقوں میں بجلی کی سپلائی پیر کی شام سے مسلسل بند ہے اور چوبیس گھنٹوں بعد بھی بجلی کی بحالی کے آچار معدوم دکھائی دے رہی ہیں جبکہ کئی علاقوں میں برفباری کی وجہ سے تاروں اور بجلی کے کھمبوں کو نقصان پہنچنے کی بھی اطلاعات ہیں۔ قصبہ بانہال میں شاہراہ سے برف کو فوری طور صاف نہ کئے جانے کی وجہ سے دو شدید بیماروں کو رام بن اور وادی کشمیر کی طرف منتقل کرنے میں کئی گھنٹوں کی تاخیر کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ بیماروں کو لیکر جانے والی ایمبولینس پہلے پنتھیال کی پسی کے پاس پھنسی رہی اور بعد میں ریل کے ذریعے کشمیر بھیجنے کی کوشش میں یہ ایمبولینس ریلوے سٹیشن بانہال کے نزدیک برف میں پھنس کر رہ گئی تاہم بعد میں دونوں مریضوں کو منگل کی دوپہر بذریعہ ریل سرینگر منتقل کیا گیا اور شاہراہ سے برف کو بھی صاف کیا گیا۔ اس دوران بانہال کے مختلف علاقوں سے برفباری میں پیدل چل کر گیارھویں کا امتحان دینے پہنچے امیدواروں کا امتحان بھی  ملتوی کیا گیا ہے۔ جبکہ بانہال کے ٹھٹھاڑ علاقے میں ایک چنار کے گرنے کی وجہ سے حضرت طاہر شاہ رحمتہ اللہ علیہ کی زیارت اور ایک مکان کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔ جواہر ٹنل اور بانہال کے سیکٹر میں ایک سے ڈیڑھ فٹ برف جبکہ بانہال کے کھڑی ، مہو منگت اور پوگل پرستان کے علاقوں میں بھی ایک سے ڈیڑھ فٹ برف ریکارڈ کی گئی ہے۔ کھڑی ، مہومنگت ، پوگل پرستان اور نیل وغیرہ کو ملانے والی بیشتر رابطہ سڑکیں بند ہوگئی ہیں اور بجلی کی سپلائی پیر کے روز ہی منقطع ہوگئی ہے۔ بانہال میں بھی بجلی کی سپلائی پیر کی شام سے بند ہوگئی ہے اور منگل کی شام تک بھی بجلی کو بحال نہیں کیا جا سکا ہے۔