ضلع اسپتال میں خاتون کی موت، پسماندگان کا تحقیقات کا مطالبہ

اننت ناگ//ضلع اسپتال اننت ناگ میں ڈاکٹروں کی مبینہ لاپرواہی سے دو بچوں کی ماں کی موت پر لواحقین نے ڈورو میں اسپتال انتظامیہ کے خلاف زبردست احتجاج کیا۔38سالہ رفیقہ بانو زوجہ ریاض احمد ڈار ساکن منزموہ نامی خاتون کی موت گذشتہ اتوار کو ضلع اسپتال میں واقع ہوئی تھی۔مذکورہ خاتون کے رشتہ داروں اور دیگر پڑوسیوں نے منگل کو تحصیل آفس ڈورو کے سامنے احتجاج کیا اور معاملے کی تحقیقات کا مطالبہ کیا۔رفیقہ کے شوہر ریاض احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ انکی اہلیہ ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت شعاری کے سبب موت کی آغوش میں چلی گئی ۔انہوں نے کہا کہ واقعہ میں ملوث ڈاکٹروں کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے ۔ریاض احمد نے کہاکہ جب اُنہوں نے مذکورہ خاتون کو اسپتال میں داخل کیا تو اسپتال میں تعینات ڈاکٹروں نے مریضہ کی طرف کوئی توجہ نہیں دی اور کئی گھنٹوں تک مریضہ بیڈ پر دردسے تڑپتی رہی جس کے بعد اُس کا انتقال ہو ۔اُنہوں نے ڈاکٹروں پر سنگین الزامات عائد کئے۔اس بیچ تحصیلدار ڈورو مظاہرین کے بیچ پہنچے اور اُنہیں یقین دلایا کہ وہ معاملہ ضلع ترقیاتی کمشنر کی نوٹس میںلائیں گے۔اُنہوں نے گورنر انتظامیہ سے اپیل کی کہ وہ دور دراز علاقوں میں طبی خدمات کو مزید بہتری کے لئے اقدامات کریں۔