صورہ اور اونتہ بھون میں جھڑپیں

سرینگر// بلدیاتی چنائو کے چوتھے اور آخری مرحلے پر منگل کوصورہ میں پولنگ بوتھ کے نزدیک سنگباری کے واقعات رونما ہوئے۔ کل صبح سے ہی یہاں بیسوں نوجوانوں نے احتجاج کرتے ہوئے فورسز پر سنگباری کی۔اس موقعہ پرپولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ٹیر گیس گولوں کا استعمال کیا۔سبزی منڈی صورہ میںنوجوانوں دن بھر آزادی کے حق میں نعرے بازی کرتے رہے جس کے دوران  فورسز نے ان کو تتر بتر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کیا اورنوجوانوں نے ان پر پتھراؤ کیا۔مشتعل نوجوانوں پر فورسز نے ٹیر گیس شلنگ کی اور یہ سلسلہ پورے دن بھر جاری رہا۔صورہ وارڑ نمبر 69 میں قائم کے گئے پولنگ اسٹیشن پر ایک بھی ووٹ نہیں ڈالا گیااور شام کو ووٹنگ ختم ہوتے ہی جب پولنگ عملہ  90 فٹ شاہراہ سے واپس جاررہا تھا، اونتہ بھون کے قریب ان کی ایک گاڑی اچانک خراب ہوگئی جس کے دوران درجنوں نوجوان نمودار ہوئے اور گاڑیوں پر پتھراؤ کیا جس سے تین گاڑیوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور ان میں سوار پولنگ عملہ کے تین افراد معمولی طور پر زخمی ہوگئے۔ادھر نوشہرہ علاقے میں اس وقت بھاجپا کی ایک خاتون امیدوار عوامی غیض و غضب کاشکار ہوئی،جب نوجوانوں نے انکی گاڑی کو نشانہ بنایا۔عینی شاہدین نے بتایا کہ ایک خاتون امیدوار اپنی گاڑی میں ذاتی محافظین کے ہمراہ سوار تھی اور اس دوران انہیں سنگباری کا نشانہ بنایا گیا۔تاہم وہ محفوظ رہیں۔