صفرلائن اور تار بندی کے درمیان قائم پرائمری سکول

مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن کے سرحدی علاقہ میں قائم گور نمنٹ پرائمری سکول ’’اپر صوالہ ‘‘کی عمارت گزشتہ 10برسوں سے مکمل ہی نہیں ہو سکی جس کی وجہ سے سکول میں زیر تعلیم بچوں کیساتھ ساتھ سٹاف ممبران بھی پریشان ہیں ۔مکینوں نے بتایا کہ صفرلائن اور تار بندی کے درمیان میں قائم کردہ سکول میں اس وقت 20سے زائد طلباء زیر تعلیم ہیں جبکہ ان کو تعلیم فراہم کرنے کیلئے 2ٹیچر بھی تعینات کئے گئے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ انتظامیہ کی جانب سے بچوں کو معیاری تعلیم فراہم کرنے کیلئے 2012میں عمارت کی تعمیر کا عمل شروع کیا تھا جبکہ اُسی برس عمارت پر لینٹر ڈال دیا گیا لیکن اس کے بعد اس کو مکمل کرنے کیلئے کوئی عملی کام نہیں کیا گیا ۔والدین و علاقہ کے پنچایتی اراکین نے بتایا کہ مینڈھر سب ڈویژن میں ہونے والے عوامی اجلاسوں کے دوران بھی عمارت کا معاملہ اعلیٰ حکام کے نوٹس میں لایا گیا لیکن اس کے باوجود بھی دوس برسوں سے عمارت کو مکمل ہی نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے صفر لائن کے قریب بچے خوف کے سائے میں تعلیم حاصل کررہے ہیں ۔انہوں نے جموں وکشمیر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ تعمیر اتی ایجنسی اور متعلقہ ٹھیکیدار کیخلاف کارروائی عمل میں لا کر جلدازجلد عمار ت کو مکمل کروایا جائے ۔