صد ر ہسپتال سے چرائی گئی آلٹو کار 4سال بعد برآمد | 2افراد سلاخوں کے پیچھے ،تحقیقات شروع

سرینگر// پولیس نے صدر ہسپتال سرینگر سے4سال قبل چرائی گئی ایک آلٹوکار کو برآمد کرکے 2افراد کو گرفتار کرکے سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ہے ۔پولیس بیان کے مطابق 14جنوری 2016کو پولیس سٹیشن کرن نگر میں محمد اشرف نجار ولد غلام محمد ساکن جامع محلہ پٹن نے شکایت درج کرائی کہ نامعلوم افراد نے اس کی آلٹو کار زیر نمبرJK05B-9180  چرالی ۔جس کے بعد اس سلسلے میں ایف آئی آر زیر نمبر04/2016کے تحت کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی گئی ۔تاہم جب کیس میں کوئی پیش رفت نہی ہوئی تو 3دسمبر2016کو کیس بند کیاگیا ۔اس دوران 2ستمبر2020کو پولیس سٹیشن کرن نگر کو یہ اطلاع ملی کہ مذکورہ آلٹو کار کو سری گفوارہ میں دیکھا گیا جس کے بعد ایس ڈی پی او شہد گنج نے اس کیس کو سر نو کھول دیا اور پولیس نے کار کو فاروق احمد وانی ولد اسد اللہ ساکن کاٹھو بجبہاڑہ کی تحویل سے برآمد کیا ۔پوچھ کے دوران فاروق احمد نے بتایا کہ انہوں نے 2016میں یہ کار منظور احمد گنائی ولد غلام قادر ساکن زر پارہ بجبہاڑہ سے 164000 روپے میں خریدی ۔جس کے بعد پولیس نے ان دونوں افراد کو گرفتار کرکے سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ۔اس سلسلے میں تحقیقات جاری ہے اور مزید انکشافات متوقع ہیں ۔