صحت و طبی تعلیم میں میڈیکل افسروں کی تقرری

جموں//ریاست کے دُور دراز اور پچھڑے علاقوں میں طبی سہولیات میں بہتری لانے کی خاطر صحت و طبی محکمہ نے فاسٹ ٹریک بنیادوں پر921میڈیکل افسروں کی تقرری عمل میں لائی ہے۔بھرتی عمل میں سرعت لانے کے لئے محکمہ صحت و طبی تعلیم نے اس سلسلے میں ایس آر او جاری کیا۔اس طرح تقرری کا عمل وقت مقررہ کے اندر مکمل کیا گیا۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ محکمہ نے جے اینڈ کے ہیلتھ اینڈ فیملی ویلفیئر سروس کے لئے 1000میڈیکل افسروں کی اسامیاں پبلک سروس کمیشن کو ریفر کی تھی۔تحریری امتحان کے بعد پبلک سروس کمیشن نے 921 منتخب میڈیکل افسروں کی فہرست جاری کی۔صحت و طبی محکمہ نے یہ سارا عمل تین ماہ کے اند ر مکمل کیا اور منتخب شدہ میڈیکل افسروں کے حق میں تقرری کے احکامات جاری کئے گئے ہیں۔
جن 921 اُمید واروں کو منتخب کیا گیا ہے اُن میں سے 35کو اننت ناگ، 18بانڈی پورہ ،58کو بارہمولہ، 28کو بڈگام ،119کو ڈوڈہ،33گاندربل ، 32جموں ،52کو کرگل ، 84کو کٹھوعہ ، 46کشتواڑ ، 62کو کپواڑہ،30کو لگام ،33لیہہ ،27کو پلوامہ ،81کو پونچھ،56کو رام بن ، 57راجوری،16ریاسی، 8کو سانبہ،15کو شوپیاں اور 41اُمیدواروں کو ادھمپور ضلع میں تعینات کیا گیا ہے۔ان میں سے سپیشلائزیشن کی ڈگری رکھنے والے 185میڈیکل افسروں کو ریاست کے مختلف اضلاع میں تعینات کیا گیا ہے۔
اس سلسلے میں ایک حکمنامے کے مطابق تمام منتخب میڈیکل افسروں سے کہا گیا ہے کہ وہ 21روز کے اندر اندر متعلقہ ڈرائنگ اینڈ ڈسبرسنگ افسروں سے رابطہ قائم کریں بصورت دیگر ان کی تقرری کو منسوخ سمجھا جائے گا۔ان تمام منتخب شدہ میڈیکل افسروں کو ضلع سطح پر ضروری تربیت دی جائے گی جس کی نگرانی گورنر کے مشیر کے وِجے کمار اور پرنسپل سیکرٹری صحت و طبی تعلیم اتل ڈولو کریں گے۔گورنر ستیہ پال ملک ، ان کے مشیر کے۔ وِجے کمار اور چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم نے ان میڈیکل افسروں کو مُبارک باد دیتے ہوئے اُمید ظاہر کی کہ وہ اپنے فرائض لگن اور تندہی کے ساتھ انجام دیتے ہوئے دُور دراز علاقے کے لوگوں کو طبی خدمات دستیاب رکھیں گے۔اس کے علاوہ جے اینڈ کے پبلک سروس نے 37امید واروں کی سفارشات کو التوا ء میں رکھا ہے ۔