’شیواجی اور مسلمان‘

 ممبئی//اردو کے سینئر صحافی سعید حمید نے ایک انتہائی اہم اور سلگتے ہوئے موضوع پر اردو زبان میں کتاب لکھی ہے ،جسے تحقیقات ایکسپریس پبلی کیشن نے شائع کیا ہے ۔'' چھترپتی شیواجی مہاراج اور مسلمان ''اس عنوان سے شائع شدہ اس کتاب کے متعلق سعید حمید نے کہا کہ آج سیاسی مفادات کے مد نظر تاریخ سے کھلواڑ کیا جا رہا ہے اور من گھڑت تاریخ کا استعمال فرقہ وارانہ نفرت پھیلانے کیلئے کیا جا رہا ہے ۔وقت کا تقاضہ ہے کہ محض چھوٹے چھوٹے سیاسی مفادات کیلئے سماج میں نفرت کا زہر پھیلانے والے فرقہ پرست عناصر کا منہ توڑ جواب دیا جائے ۔انہوں نے مزید کہا کہ چونکہ آج من گھڑت تاریخ کو ہی نفرت اور فرقہ واریت کا ہتھیار بنایا جا رہا ہے اس لئے جعلی تاریخ کا پوسٹ مارٹم ضروری ہے ۔اس کا اجراء بروز بدھ مورخہ26ستمبر2018ء کو دوپہر ڈھائی بجے مراٹھی پترکار سنگھ ، آزاد میدان میں منعقدہونے والی ایک تقریب میں ہوگا۔سعید حمید نے مراٹھا حکمراں چھتر پتی شیواجی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ انہیں ایک عرصہ تک اسلام دشمن اور مسلم دشمن حکمراں بنا کر پیش کیا گیا تاکہ فرقہ وارانہ ایجنڈے کو آگے بڑھایا جائے ۔ اس کیلئے حقیقی تاریخ میں من گھڑت افسانوں کو شامل کیا گیا۔ مراٹھی زبان میں پھلے ۔ شاہو۔ امبیڈکر طرز فکر کے مورخین، مصنفین نے حقائق کو سامنے لاکر یہ ثابت کیا کہ چھترپتی شیواجی مہاراج مسلمانوں یا اسلام کے دشمن حکمراں نہیں تھے ۔چونکہ اردو زبان میںیہ مواد دستیاب نہیں تھا اس لئے '' چھترپتی شیواجی مہاراج اور مسلمان '' اس عنوان سے یہ کتاب شایع کی گئی ہے تاکہ اردو عوام کو بھی تاریخی حقائق سے واقفیت ہوسکے ۔سعید حمید کے مطابق اس کتاب میں ایک سیکولر ، سوشلسٹ ، بہوجن وادی مراٹھا حکمراں چھترپتی شیواجی مہاراج کی انصاف پسند ، مسلم دوست شخصیت کا احاطہ کیا گیا ہے ، وہیں اس بات کی بھی نشاندہی کی گئی ہے کہ سرو دھرم سمبھاو میں یقین رکھنے والے ایک مراٹھا حکمراں کی تاریخ کو کن عناصر نے مسخ کرنے کی کوشش کی اور کیوں ؟ ایک طرح سے یہ کتاب جعلی اور من گھڑت تاریخ کا پوسٹ مارٹم بھی کرتی ہے ۔اس کتاب کے اشاعتی ادارہ تحقیقات ایکسپریس کی جانب سے پریس اعلامیہ میں بتایا گیا کہ ادارے کی جانب سے پھلے ۔ شاہو۔امبیڈکر نظریات پر مبنی مزید کتابیں شایع کی جائیں گی کیونکہ اردو میں ان پر قدرے کم توجہ دی گئی ہے ۔یو این آئی۔