شیخ نذیر احمدکی 8ویں برسی | ڈاکٹر فاروق سمیت سرکردہ لیڈران کی مرقد پر گلباری جموں، کرگل اور خطہ چناب و پیرپنچال میں بھی تقریبات

سرینگر // نیشنل کانفرنس کے عظیم رہنما مرحوم شیخ نذیر احمد (ایڈوکیٹ) کی 8ویں برسی کے سلسلے میں کل تینوں خطوں میں تقریبات کا انعقاد ہوا۔ پارٹی صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ ، نائب صدر عمر عبداللہ ،جنرل سکریٹری حاجی علی محمد ساگر ، سینئر لیڈران اور کارکنوں نے مرحوم کے مقبرہ واقع ملک صاحبؒ صورہ پر حاضری دی اور وہاں گلباری اور فاتحہ خوانی کی۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے اس موقعے پر کہا کہ شیخ محمد عبداللہ نے نیشنل کانفرنس کو ایک لائحہ عمل دیا ہے اور ہماری جماعت آج بھی اُن کے لائحہ عمل پر چل کر ہر صورت میں عوام کیلئے وقف ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ شیخ نذیر نے شیخ محمد عبداللہ کے اصولوں اور نقوش پر کبھی بھی سمجھوتہ نہیں کیا اور ہر حال میں جماعت کی آبیاری کی۔ فاتحہ خوانی اور گلباری میں پارٹی کے صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، ترجمانِ اعلیٰ تنویر صادق، سینئر لیڈران چودھری محمد رمضان، علی محمد ڈار، عرفان احمد شاہ، مدثر شاہ میری، سلمان علی ساگر، عمران نبی ڈار، شیخ محمد رفیع، پیر آفاق احمد، محمد خلیل بند، سید توقیر احمد، ایڈوکیٹ سیف الدین بٹ، احسان پردیسی، دین محمد چیتا، غلام نبی بٹ، غلام نبی وانی تیلبلی اور دیگر عہدیداران بھی موجود تھے۔اُدھر شیر کشمیر بھون جموں میں مرحوم کے حق میں قرآن خوانی کا اہتمام کیا گیا تھا جبکہ خراج عقیدت کا ایک اجلاس منعقد ہوا، جس میں معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفیٰ کمال صوبائی صدر جموں ایڈوکیٹ رتن لعل گپتا، سینئر پارٹی لیڈران اجے سدھوترا، شیخ بشیر احمد، بابو رام پال، عبدالغنی ملک اور وجے لوچن نے نذیر صاحب کو خراج عقیدت پیش کیا جبکہ سینئر لیڈران بملا لتھرا، عبدالغنی تیلی، پردیپ بالی، ایوب ملک، وجے لکشمی دتا اور دیگر لیڈران بھی موجو دتھے۔اسی طرح کرگل اور خطہ چناب و پیرپنچال میں بھی مرحوم شیخ نذیر کی برسی پر تقریبات ہوئیںجس میں لیڈران نے مرحوم قائد کے تاریخ ساز کارناموںپر روشنی ڈالی گئی ۔