شیخ العالمؒ کا عرس عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا

سرینگر//ریاست بھر میںعلمدار کشمیر شیخ العالم حضرت شیخ نور الدین نورانی ؒ کے598ویں سالانہ عرس کی تقریبات انتہائی عقیدت و احترام  کے ساتھ منائی گئیں اور شب خوانی کے بعد دن بھر ہزاروں عقیدتمندوں ،علماء، سیاسی لیڈران اور بیرون وادی سے آئے کشمیری پنڈتوں کی بڑی تعداد نے درگاہ عالیہ چرار شریف میں حاضری دی۔عرس کے سلسلے میں چرار شریف قصبہ کی فضائیں رات بھر درودواذکار اور شیخ العالم ؒ کے کلام سے گونجتی رہیں اور صبح صادق کے ساتھ ہی مردوزن کی آمد کا سلسلہ شروع ہوا ۔ عرس کی تقریبات کے سلسلے میں سوموار کو درگاہ شیخ العالمؒ میں نماز عشاء کی ادائیگی کے بعد سے صبح صادق تک درود و اذکار،کلام شیخ العالم ؒ اور نعت خوانی کی با برکت مجالس منعقد ہوئیں ۔ اس موقعہ پر میر واعظ چرار شریف مولانا امیرالدین نے شیخ العالم ؒ کی تعلیمات پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔شب خوانی کی تقریب میں وادی کے اطراف و اکناف سے آئے عقیدتمندوں نے حصہ لیا جو خاص طور پر شیخ العالمؒ کے عرس کی تقریب میں شرکت کرنے کیلئے چرار شریف پہنچے تھے۔منگل کو ہزاروں کی تعداد میںعقیدتمندوں نے شیخ العالمؒ کی درگاہ میں نماز ظہر ادا کی اور درودو اذکار اور خصوصی دعائوں کی محفلوں میں حصہ لیا۔ایک محتاط اندازے کے مطابق منگل کو50ہزار سے زائد عقیدتمندوں نے چرار شریف میں حاضری دی۔عرس کے سلسلے میں پورا دن چرار شریف قصبے میں غیر معمولی گہما گہمی دیکھنے کو ملی اور اس موقعہ پر ہزاروں لوگوں سے خطاب کے دوران علماء نے شیخ نور الدین نورانی ؒ کی تعلیمات اور ان کے کلام پر مفصل روشنی ڈالی ۔جموں اور دلی سے آئے کشمیری پنڈتوں نے بھی شیخ العالمؒ کی درگاہ پر حاضری دی۔واضح رہے کہ گزشتہ برس نا مساعد حالات کی وجہ سے کشمیری پنڈت شیخ العالمؒ کے سالانہ عرس کی تقریب میں شریک نہیں ہوئے۔تاہم اس بار بخشی نگر جموں سے 21افراد پر مشتمل کشمیری پنڈتوں کا ایک قافلہ چرار شریف وارد ہوا جن میں4بچے اور 8خواتین بھی شامل تھیں۔اس کے علاوہ دلی سے آئے دو کشمیری پنڈت کنبوں نے بھی چرار شریف میں حاضری دی۔قابل ذکر ہے کہ کشمیری پنڈتوں میں شیخ العالم ؒ نند ریشی کے نام سے مشہور ہیں اورکشمیری پنڈت ان کے تئیں والہانہ عقیدت رکھتے ہیں ۔سالانہ عرس کی اختتامی تقریب20اکتوبرجمعہ کو منعقد ہوگی جس میں ہزاروں عقیدتمندوں کی شرکت متوقع ہے۔