شہر کی سڑکوں پرموت کا خونین رقص

 سرینگر //سرینگر شہر میں بھی سڑکوں پر موت کا خونین رقص جاری ہے اور رواں سال جون کے آخر تک 200سڑک حادثات میں 21افراد لقمہ اجل جبکہ 221زخمی ہوئے ہیں ۔محکمہ ٹریفک کا کہنا ہے کہ یہ حادثات اورلوڈنگ ، موبائل کا استعمال اور تیز رفتاری کے سبب ہوئے ہیں ۔محکمہ میں موجود ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کواعداد وشمار پیش کرتے ہوئے بتایا کہ شہر میں جنوری کے مہینے میں 26سڑک حادثات رونما ہوئے جس میں 4لوگ لقمہ اجل اور 24زخمی ہوئے ،فروری میں شہر میں 30سڑک حادثات میں 2افراد لقمہ اجل اور 23زخمی ہوئے ،مارچ میں 36سڑک حادثات میں 3لوگ لقمہ اجل اور 45زخمی ہوئے ہیں ،اپریل میں 32حادثات میں 3ہلاک اور 31زخمی ہوئے ، مئی میں 41سڑک حادثات میں 5افراد کی موت اور 52زخمی ہوئے اور جون میں 35سڑک حادثات کے دوران 4لقمہ اجل اور 46زخمی ہوئے ہیں اور اس طرح شہر بھی سڑک حادثات سے محفوظ نہیں ہے اورروزسڑک حادثات رونما ہوتے ہیں ۔محکمہ ٹریفک کا کہنا ہے کہ انہوں نے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف شکنجا کسا ہے اور محکمہ پوری طرح سے متحرک ہے اور اپنا کام انجام دے رہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ زیادہ تر حادثات موبائل فون کے استعمال اور تیز رفتاری کے سبب پیش آئے ۔