شہر میں انسانوں پر کتوں کے بڑھتے ہوئے حملے

سرینگر//شہر سرینگر اور اسکے گرد و نواح میں آوارہ کتوں کی ہڑ بھونگ اور انسانوں پر حملوں کی وجہ سے سنگین صورتحال پیدا ہو چکی ہے۔ آوارہ کتوں کی وجہ سے لوگوں کا جان وما ل خطرے میں پڑا ہوا ہے اور آئے روز آوارہ کتوں کے کاٹنے کے جوواقعات رونماہوئے ہو رہے ہیں جس کی وجہ سے عوامی حلقوں میں زبردست تشویش پائی جا رہی ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ گزشتہ 9ماہ کے دوران شہر سرینگر کے مختلف علاقوں میں آورہ کتوں کے 3832حملے ریکارڈ کئے گئے ۔ سرکاری ہسپتالوں سے جو اعداد و شمار دستیاب ہوئے ہیں ان کا سر سری جائزہ لینے سے یہ حقیقت منکشف ہو جاتی ہے کہ سال2018میں کتے کے کاٹنے سے متاثرہ افراد کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور زیادہ تر حملے چھوٹے اور ا سکول جاتے بچوں پر ہوئے ہیں ۔ دوسری طرف ہسپتالوں میں انٹی ربیز انجکشن دستیاب نہیں ہیں اور کتے کے کاٹنے سے متاثرہ افراد کو جان کے لالے پڑ جاتے ہیں۔