شوپیاں ، سوپور اورڈانگرپورہ بارہمولہ میں بجلی کی آنکھ مچولی سے عوام پریشان

شوپیان+بارہمولہ+سوپور//شوپیاں، سوپور اور ڈانگرپورہ نارواو بارہمولہ میں سحری اور افطار کے درمیان بجلی کی آنکھ مچولی سے صارفین کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ ضلع شوپیان اور اسکے ملحقہ علاقوں میںرمضان کے دوران سحری اور افطار کے اوقات میں محکمہ بجلی کی طرف سے غیر اعلانیہ کٹوتی نے عوام کو شدید مشکلاتوں میں ڈال دیا ہے۔ مقامی لوگوں نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ موجودہ سرکار ایک طرف رمضان المبارک کے دوران بلاخلل بجلی اور پانی کی سپلائی اور غذائی اجناس کی فراہمی کے دعوے کر رہی ہے وہیں میٹر نصب ہونے کے باوجود محکمہ بجلی کی طرف سے اس مقدس مہینے میں بجلی کٹوتی نے سرکار کے دعووں کی پول کھول دی ہے۔لوگوں نے محکمہ بجلی کے ذمہ داروں سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ وہ رمضان المبارک میں خاص کر سحری اور افطار کے اوقات بجلی کی آنکھ مچولی سے صارفین کو چھٹکارا دلائیں۔ادھر بارہمولہ کے ڈانگر پورہ نارواو علاقے میںبجلی کی آنکھ مچولی کے نتیجے میں لوگوں کو سحری اور افطاری کے وقت دقتوں کا سامنا کر نا پڑتاہے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ بجلی کے خلاف شدید برہی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ رمضان کے اس مقدس مہینے میں بھی ڈانگر پورہ نارواو گائوں پچھلے ایک ہفتے سے برقی رو سے محروم ہے جس کے نتیجے سے علاقہ شام ہوتے ہی گھپ اندھیرے میں ڈوب جاتا ہے۔ لوگوں کے مطابق انہوں نے کئی بار متعلقہ محکمہ کو اس بارے میں مطلع کیاا تھا تاہم انہوں نے اس کی طرف کوئی دھیان نہیں دیا ۔انہوں نے سرکار اور متعلقہ محکمہ کے علیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ علاقے میں جلد از جلد بجلی کی سپلائی کو یقینی بنائے تاکہ لوگوں کو مشکلات سے نجات مل سکے۔اس دوران ماہ صیام میں بھی شمالی کشمیر کے ضلع سوپور کے لوگوں کو بجلی نصیب نہیں ہے اور سوپور پچھلے کئی دنوں سے گھپ اندھیرے میں ڈوبا ہے۔ سوپور اور اسکے ملحقہ گائوں میں رہنے والے لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ غیر اعلانیہ کٹوتی کی وجہ سے سخت مشکلات کا سامنا کررہے ہیں۔ سوپو کے زینہ گیر علاقے میںمقامی لوگوں نے بتایا کہ بجلی کی بلیں وقت پر ادا کرنے کے بائوجود بھی سوپور بجلی سٹیشن سے انہیں بجلی فراہم نہیں ہورہی ہے۔ ادھر سوپور کے نور باغ علاقے میں رہنے والے لوگوں کا کہنا ہے کہ بجلی کی آنکھ مچولی کا سلسلہ جاری ہے اور لوگوں کی جانب سے بار بار محکمہ بجلی کے اعلیٰ افسران کو مطلع کیا گیامگر وہ صرف تماشائی بنے ہوئے ہیں۔ ٹریڈرس فیڈریشن سوپور کے صدر حاجی محمد اشرف گنائی نے بتایا کہ پی ڈی ڈی محکمہ ایک بڑا مسئلہ بن گیا ہے کیونکہ وہ ہمیشہ سے ہی بجلی سپلائی بحال کرنے میں ناکام رہا ہئے جسکی وجہ سے لوگوں کو گوناگوںمشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک مرتبہ ہم نے حکومت اور محکمہ پی ڈی ڈی کے اعلیٰ افسران سے بجلی فراہم کرنے کی اپیل کی تھی مگر حکومت کی جانب سے ہماری شکایات کے ازالہ کیلئے کچھ بھی نہیں کیا گیا ہے۔ ادھر سوپور کے دور افتادہ گائوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے کہا ہے کہ سحر ی اور افطار کے وقت بجلی کی عدم دستیابی سے لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے  کیونکہ بجلی کٹوتی میں کمی کے بجائے اضافہ کیا گیا ہے۔ بار بار کوشش کرنے کے بائوجود بھی سوپور میں محکمہ پی ڈی ڈی کے اعلیٰ افسران کے ساتھ رابطہ نہیں ہوسکا ہے۔