شوپیان شہری ہلاکتوں کے خلاف وکلاء سراپا احتجاج

سرینگر// شوپیاں میں شہری ہلاکتوں کے خلاف وکلا نے سرینگر کے علاوہ شمال و جنوب میں بھی احتجاجی ریلی برآمد کرتے ہوئے عام لوگوں کی ہلاکتوں پر فوری قدغن لگانے کا مطالبہ کیا۔ ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے شوپیاں میں ہلاکتوں کے خلاف احتجاج کی کال دی تھی۔اس دوران سرینگر میں مومن آباد ضلع کورٹ کمپلیکس سے وکلاء کا ایک جلوس برآمد ہوا،تاہم پولیس نے انکی پیش قدمی کو روکتے ہوئے آگے جانے کی اجازت نہیں دی،جس کے بعد عدالت کے باہر ہی پرامن طور پر منتشر ہوئے۔احتجاج کی وجہ سے ضلع کورٹ کمپلیکس میں بعد از دوپہر  عدالتی کام پر بھی منفی اثرات مرتب ہوئے۔احتجاجی وکلاء نے پلے کارڑ بھی اٹھا رکھے تھے،جن پر شہری ہلاکتوں کو بند کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ نائب صدر ایڈوکیٹ مشتاق احمد ڈار کی قیادت میں برآمدہ جلوس میں سابق صدر ایڈوکیٹ نذیر احمد رونگا اورایڈوکیٹ محمد امین بٹ نے بھی خطاب کیا۔بار جنرل سیکریٹری ایڈوکیٹ جی این شاہین نے وکلاء سے خطاب کرتے ہوئے شوپیاں میں عام شہریوں کو خاک و خون میں لت پت کرنے پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جموں وکشمیر با لخصوص جنوبی کشمیر میں جنگ جیسی صورتحال پیدا کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ دیگر لوگوں کے علاوہ دو کمسن بچیوں سبرینہ اور ثمینہ کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیااور انہیں بستر مرگ پر پہنچایا گیا۔بار جنرل سیکریٹری نے کہا کہ آئے دن محاصروں اور تلاشیوںکی آڑ میں عام شہریوں کی زندگی کو اجیرن بنادیا گیا ہے جبکہ عام شہریوں کے ساتھ جانوروں جیسا سلوک روا رکھا جا رہا ہے۔ شاہین نے اس بات پر بھی تشویش کیا کہ متاثرین کو ادارجاتی انصاف بھی فرہم نہیں کیا جا رہا ہے۔ جی این شاہین نے متاثرین کو فرہمی انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے بین الاقوامی برداری سے اپیل کی کہ وہ بھارت پر دبائو ڈالے کہ کشمیر میں جاری کشت و خون کے چکر پر فوری طور پر لگام دی جائے۔اس موقعہ پر انہوں نے ہند وپاک کے درمیان مذاکراتی عمل شروع کرنے کی وکالت کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کیلئے کشمیری عوام کو اعتماد میں لیا جائے۔انہوں نے اقوم متحدہ سے بھی مداخلت کی اپیل کی۔نامہ نگار اشرف چراغ کے مطابق اس دوران شمالی کشمیر کے کپوارہ میں بھی وکلاء نے احتجاج کرتے ہوئے شہری ہلاکتوں کو بند کرنے کا مطالبہ کیا۔ ضلع بار صدر ایڈوکیٹ غلام محمد شاہ کی قیادت میں وکلاء نے سنیچر کو سوپور،کپوارہ شاہرہ پر دھرنا دیااور شوپیاں میں پیش آئے واقعے کی مذمت کی۔ادھر نامہ نگار ملک عبدالسلام کے مطابق اسلام آباد(اننت ناگ) میں بھی ضلع بار صدر ایڈوکیٹ فیاض احمد سوداگر کی قیادت مین وکلاء نے احتجاجی جلوس برآمد کرتے ہوئے شوپیاں ہلاکتوں کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔