شراب کی فروخت کیخلاف سلسلہ وار احتجاج کا انتباہ

عظمیٰ نیوز سروس

جموں // شیو سینا نے کہا کہ جموں و کشمیر میں زیادہ تر شراب فروشوں کی طرف سے ایم آر پی سے زیادہ قیمت پر شراب فروخت کرنے کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ حال ہی میں محکمہ ایکسائز نے محض رسمی کارروائی کی تکمیل کیلئے کچھ شراب فروشوں پر چھاپہ مار کر لاکھوں روپے کا جرمانہ وصول کیا لیکن یہ مہم صرف ایک دن تک محدود رہنے سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس غیر قانونی ریکوری کی ڈور بہت زیادہ جڑی ہوئی ہے۔ منیش ساہنی، صدر، شیو سینا (یو بی ٹی) جموں و کشمیر یونٹ نے پریس کلب میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ درجنوں شکایات، احتجاج اور میمورنڈم کے دباؤ کی وجہ سے محکمہ ایکسائز اپنی گہری نیند سے بیدار ہوا اور اس کھلے عام لوٹ مار کے خلاف کریک ڈاؤن کرنے کا فیصلہ کیا۔ شراب مافیا کی ایکسائز ٹیم کے چھاپے کے دوران 35 کے قریب دکاندار قصوروار پائے گئے اور چھ لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ وصول کیا گیا۔ اتنی بڑی کامیابی کے باوجود یہ مہم صرف ایک دن تک محدود رہی ۔ساہنی نے کہا کہ جموں و کشمیر میں زیادہ تر شراب بیچنے والے کھلے عام ایم آر پی سے زیادہ قیمت وصول کر رہے ہیں۔ 20 سے 100 روپے کی کھلی لوٹ مار ہے جو کہ مضافات اور وادی کشمیر میں تقریباً دوگنی ہے۔ساہنی نے کہا کہ جموں و کشمیر کے چیف سکریٹری اور ایکسائز کمشنر کو ایک میمورنڈم کے ذریعے ان کے مندرجہ بالا مطالبات سے آگاہ کیا گیا ہے۔ ساہنی نے انتباہی لہجے میں کہا کہ اگر اس غیر قانونی وصولی کو فوری طور پر بند نہیں کیا گیا تو شیو سینا مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں احتجاج کا سلسلہ شروع کر دے گی۔