شالہ بگ آبی پناہ گاہ کا وائلڈ لائف گارڈ

گاندربل// انسداد بدعنوانی بیورو نے شالہ بگ آبی پناہ گاہ میں تعینات محکمہ وائلڈ لائف کے گارڈکومہاجر آبی پرندوں کے غیر قانونی شکار میں استعمال ہونے والی ضبط شدہ بندوق کو واپس دینے کے عوض 5 ہزار روپے کی رشوت لینے کے دوران ایک دلال کے ہمراہ گرفتار کیا۔بتایا جاتا ہے کہ مذکورہ ملازم ایمپلائز جوائنٹ ایکشن کمیٹی کا ترجمان بھی ہے۔انسداد بدعنوانی بیورو کو شکایت ملی تھی کہ محکمہ جنگلی حیات کا ایک گارڈ طارق احمد صوفی ،جو آبی پناہ گاہ شالہ بگ میں تعینات ہے،ایک شہری کا سامان واپس دینے کے عوض 5000 روپے رشوت طلب کررہا ہے۔شکایت موصول ہونے پر بدعنوانی کی روک تھام ایکٹ 1988 کے تحت جرم کا پتہ چلایا گیا اوراینٹی کورپشن بیورو کے تھانہ میں کیس زیر نمبر06/2022  درج کیا گیا۔تحقیقات کے دوران ایک ٹیم تشکیل دی گئی جنہوں نے ایک کامیاب جال بچھا کر محکمہ وائلڈ لائف گارڈ طارق احمد صوفی ساکن زینہ کوٹ سرینگر اور لین دین کا معاملہ طے کرنے والے دلال محمد یاسین بٹ کو پانچ ہزار کی رشوت وصول کرنے کے دوران رنگے ہاتھوں گرفتار کیا ۔دونوں ملزمان کو اینٹی کرپشن بیورو کی ٹیم نے آزاد گواہوں کی موجودگی میں رشوت کی رقم سمیت حراست میں لے لیا۔