سی بی ایس ای کے تحت دسویں جماعت کے نتائج کا اعلان

 سرینگر//بلال فرقانی// وادی میں ’’سی بی ایس ای‘‘(ثانوی تعلیم کے مرکزی بورڑ) سے منسلک تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم 10ویں جاعت کے تمام طلاب نے کامیابی کا جھنڈا گاڑ دیا ہے،اور ان اسکولوں نے صد فیصد کامیابی حاصل کی۔سی بی ایس ای‘‘(ثانوی تعلیم کے مرکزی بورڑ)  کے تحت10ویں جماعت کے نتائج کا اعلان کیا گیا تو وادی کے تمام وہ اسکول جو اس بورڑ سے منسلک ہیں،میں کامیابی کی شرح صد فیصد رہی۔ان اسکولوں میں زیر تعلیم طلاب نے بہتر کارکردگی پیش کرتے ہوئے اپنا لوہا منوایا۔پیر کوسی بی ایس ای‘‘(ثانوی تعلیم کے مرکزی بورڑ)  کے2018-19کے10ویں جماعت کے نتائج کا اعلان کیا گیا۔ وادی میں سی بی ایس ایس ایس ای سے منسلک تمام اسکولوں نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔معلوم ہوا ہے کہ ڈون پبلک اسکول کے23طلاب نے امتحانات میں شرکت کی تھی،جس میں سے17نے امتحانات میں ڈسٹکنشن حاصل کی،جبکہ اسکول میں عبدالمجیب نے پہلی پوزیشن حاصل کی۔ دہلی پبلک اسکول اتھوجن کے269طلاب نے دسویں جماعت کے امتحانات میں شرکت کی تھی،جن میں سے212 ڈسٹکشن حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔اس اسکول میں رویدا ارشد نے  پہلی پوزیشن حاصل کی۔ادھر معلوم ہوا ہے کہ ڈی پی ایس بارہمولہ بھی صد فیصد کامیابی حاصل کرنے میں کامیاب ہوا،جبکہ اس اسکول کے تمام44طلاب امتیازی نمبرات سے کامیاب ہوئے ہیں،جبکہ یامن راشید پہلی پوزیشن ھاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔ معلوم ہوا ہے کہ جی ڈی گونیکا اسکول جموں،جے کے پبلک اسکول کنجونی جموں اور جودا مل پبلک اسکول جموں اور کے سی پبلک اسکول جموں میں زیر تعلیم تمام طلاب نے بھی امتیازی نمبرات کے ساتھ کامیابی حاصل کی ہے۔ مجموعی طور پر تمام ریاستوں میں13طلاب نے500میں سے499نمبرات حاصل کر کے پہلی پوزیشن حاصل کی ہے،جبکہ کامیابی کی شرح91.1فیصد رہی۔دہراہ دون کے 7اسکولوں کے طلاب پہلی پوزیشن حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔