سی بی آئی کیخلاف ممتا بنرجی کا دھرنا شروع

کلکتہ//یو این آئی//کللکتہ پولس کمشنر راجیو کمار کو چٹ فنڈ گھپلہ معاملے میں سی بی آئی کے ذریعہ گرفتار کرنے کی کوششوں پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے وزیرا علیٰ ممتا بنرجی دھرم تلہ میں واقع میٹرو چینل پر دھرنے پر بیٹھ گئی ہیں۔وزیرا علیٰ نے کہا کہ وہ جمہوریت کو بچانے کیلئے یہ دھرنا دے رہی ہیں۔خیال رہے کہ 13سال قبل ممتا بنرجی نے اسی جگہ پر یکم دسمبر 2006کو بنگال میں حصول اراضی کے خلاف طویل ترین 26دن بھوک ہڑتال پر بیٹھی تھیں۔اسی دھرنے کے بعد ہی ممتا بنرجی بنگال میں مقبول ہوئی تھیں۔اس سے قبل پولس کمشنر راجیو کمار کے گھر سی بی آئی کے افسران کے پہنچنے کی خبر ملتے ہی وزیرا علیٰ ممتا بنرجی بذات خود پولس کمشنر کے گھر پہنچ گئی تھیں اور راجیو کمار کو گرفتار ہونے نہیں دیا۔راجیو کمار کے گھر کے باہر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے وزیرا علیٰ نے کہا کہ مودی۔شاہ کی جوڑی نے ملک میں ایمرجنسی کی کیفیت پیدا کردی ہے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ پہلی مرتبہ کسی بھی پولس کمشنرکو گرفتار کرنے کی کوشش کی گئی ہے اور اس  کا مقصد پولیس افسران پر دباؤ بنانا ہے۔نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہی وزیرا علیٰ نے کہا کہ وہ ملک میں جمہوریت کو بچانے کیلئے دھرنے پر بیٹھنے جارہی ہیں اور اس کے فوری بعد وہ دھرنے کیلئے روانہ ہوگئیں۔ممتا بنرجی میٹرو چینل پر پہنچ گئی ہیں اور دھرنا دے رہی ہیں،ان کے ساتھ ترنمول کانگریس کے سینئرلیڈران فرہادحکیم، ریاستی وزیراروپ بسواس، ترنمول کانگریس کے جنرل سیکریٹری و ممبرپارلیمنٹ سبرتو بخشی موجود ہیں۔ممتا بنرجی کے دھرنے پر بیٹھنے کی خبر پھیلتے ہی میٹرو چینل پر ترنمول کانگریس کے ورکرز اور حامی بڑی تعداد میں پہنچنا شروع ہوگئے ہیں۔دوسری جانب کلکتہ پولس کے اہلکار نے سی بی آئی کے دفاتر نظام پلس اور سی جی او کمپلکس کا محاصرہ کرلیا ہے۔اس کے فورا بعد مرکزی فورسیس نے بھی سی بی آئی کے دفاتر کامحاصرہ کرلیا ہے۔یہ صورت حال دھماکہ خیز بن چکی ہے۔سی بی آئی کے سینئر افسران نے کہا کہ وہ راجیوکمار سے صرف پوچھ تاچھ کرنے کیلئے گئے تھے مگر کلکتہ پولس نے صورت حال کو ڈرامائی انداز میں تبدیل کردیا ہے۔ممتا بنرجی نے کہا کہ 19جنوری کو ترنمول کانگریس کی دعوت پر اپوزیشن جماعتوں کی بریگیڈ ریلی سے مودی اور شاہ کی جوڑی خوف زدہ ہوگئی ہے۔اس کے بعد سے ہی کارروائی تیز کردی گئی ہے۔دوسری جانب ممتا بنرجی کے دھرنے کی دہلی کے وزیر اعلیٰ اروندکجری وال اور راشٹریہ جنتادل کے لیڈر تیجسوی یادونے حمایت کی ہے۔یو این آئی