’’سی آئی ڈی کشمیریوںکودہشت زدہ کرنے میں ملوث‘‘ | محبوبہ مفتی کاسلسلہ وار ٹوئٹس میں وحیدپرہ پرمظالم ڈھانے کاالزام

سرینگر//پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی نے الزام عائد کیاہے کہ’’جموں کشمیر سی آئی ڈی مرکز کی ان ایجنسیوں کی فہرست میں شامل ہوگئی ہے،جو کشمیریوں کو جعلی طریقے سے ملوث کرکے دہشت زدہ کرتی ہے‘‘۔سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر سلسلہ وار ٹوئٹ پیغامات تحریر کرتے ہوئے الزام لگایا کہ پارٹی کے زیر حراست رہنما وحید پرہ کو جھوٹے الزامات تسلیم کرنے کے لئے تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔محبوبہ نے کہا کہ پی ڈی پی لیڈروحید الرحمن پرہ کے خلاف الزامات ثابت کرنے میں ناکامی کے بعد ، سی آئی ڈی نے’’ ایس آئی ٹی ‘‘( خصوصی تحقیقاتی ٹیم)سربراہ کو تبدیل کیا کیوں کہ انہوں نے فرضی الزامات مرتب کرنے میں ان کا ساتھی ہونے سے انکار کردیا۔محبوبہ نے تحریر کیا’’جے اینڈ کے سی آئی ڈی نے مرکزی ایجنسیوں کی فہرست میں شمولیت اختیار کرلی ہے جو کشمیریوں کو دہشت زدہ کرنے اور انھیں جھوٹے الزامات میں پھنسانے کے لئے کام کرتی ہیں‘‘۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ وحید کو جھوٹے الزامات تسلیم کرنے کے لئے ان پر ظلم و ستم ڈھایا جارہا ہے اور انہیں غیر انسانی حالات میں رکھا جارہا ہے۔انہوں نے بتایا ’’ اس کے خلاف تحقیقات دھوکہ دہی اور پہلے دن سے ہی سیاسی مفادات کی حصولیابی کیلئے ہے‘‘۔سابق وزیر اعلیٰ نے ایک اورٹویٹ میں کہا’’جھوٹے الزامات کو تسلیم کرنے کے لئے وحید پر ظلم کیا جارہا ہے اور ان پر تشدد کیا جارہا ہے۔ چونکہ دہ یہ ماننے سے انکار کر رہے ہیں اس لئے اسے غیر انسانی حالات میں رکھا جارہا ہے۔ ‘‘سابق وزیراعلیٰ نے کہا کہ اداروں کا مقصد امن و امان کو برقرار رکھنا ہے ، مگر ان جعلی تفتیشوں میں ملوث ہوکر ان کو بدنامی حاصل ہورہی ہے۔محبوبہ نے مرکزی و علاقائی تحقیقاتی ایجنسیوں پر سخت برہمی کا اظہارکرتے ہوئے مزیدلکھاکہ اس طرح کی دھوکہ دہی پر مبنی تفتیش انجام دینے کا رواج معمول بن گیا ہے جس میں مجھے آدمی دکھائیں اور میں آپ کو جرم دکھاتا ہوںکا منطق اپنایا جاتا ہے۔ خیا ل رہے کہ وحید رحمان پر ہ کو  قومی تفتیشی ایجنسی (این آئی اے) نے 25 نومبر کو گرفتار کیا گیا تھا۔ وحید پرہ نے حال ہی میں پلوامہ سے ڈی ڈی سی انتخابات میں جیت درج کرکے بی جے پی امیدوار سجاد احمد رینہ کو 321 ووٹوں کی برتر ی سے شکست دی تھی۔