سیلف ہیلپ گروپوں کا فروغ ضروری:وزیراعلیٰ

سرینگر / /وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے حکومت کے اُس حکم نامے پر سختی سے عمل پیرا ہونے کی ہدایت دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ریاست کے سیلف ہیلپ گرؤپوں کے ارکان کو30 فیصد جاب آرڈر دیئے جائیں گے۔ انہوں نے مالی حد کو60 لاکھ روپے سے بڑھا کر ایک کروڑ روپے کرنے کی بھی ہدایت دی۔ ریاست کے سیلف ہیلپ گرؤپوں کی صورتحال کا جائیزہ لینے کی غرض سے منعقدہ ایک میٹنگ کے دوران خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے اس بات کے لئے برہمی کا اظہار کیا کہ کچھ محکمے کاموں کی ٹینڈرنگ کے دوران سیلف ہیلپ گرؤپوں کو وضع کئے گئے خدو خال کے مطابق کام الاٹ نہیں کرتے۔ انہوں نے تمام محکموں سے کہا کہ وہ اس لائحہ عمل کا از سر نو جائیزہ لے کر اپنے کاموں میں ان نوجوان ٹیکنو کریٹوں کو شامل کریں۔وزیر خزانہ ، محنت و روز گار سید الطاف بخاری بھی میٹنگ میں موجود تھے۔ایک اہم ہدایت کے مطابق وزیر اعلیٰ نے جے کے بنک سے کہا کہ وہ دس روز کے اندر اندر ایک کسٹمائزڈ سکیم وجود میں لائیں تا کہ ان نوجوان کارخانہ داروں کو مناسب مالی تعاون مل سکے اور وہ قرضوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے پیچھے نہ رہ سکیں۔وزیر اعلیٰ نے ان سیلف ہیلپ گرؤپوں کی متعلقہ محکموں کی طرف سے صلاحیتوں کو فروغ دینے کی ہدایت دی تا کہ وہ ان انفرادی محکموں کی ضروریات کے مطابق اپنے کام انجام دے سکیں۔محبوبہ مفتی نے سیلف ہیلپ گرؤپوں کے رہنما خطوط میں لازمی ترامیم کرنے کی ضرورت پر زور دیا تا کہ انہیں انفرادی محکموں کی روز مرہ ضروریات اور تقاضوں کے عین مطابق بنایا جاسکے۔ انہوں نے خاص طور سے کہا کہ سیلف ہیلپ گرؤپوں کو سرکار کے مختلف اثاثوں بالخصوص محکمہ صحت میں سہولیات اور مشینری کے رکھ رکھاؤ کے کام میں شامل کیا جانا چاہئے۔میٹنگ میں جانکاری دی گئی کہ سیلف ہیلپ گرؤپوں نے عمومی طور پر کاموں کے معیار کے حوالے سے اطمینان بخش کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔اس سے قبل کمشنر سیکرٹری محنت و روز گار کفائت حُسین رضوی نے میٹنگ کے دوران سکیم کے خدو خال پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔واضح رہے کہ سیلف ہیلپ گرؤپ سکیم ریاست میں مختلف انجنئیرنگ شعبوں کے ساتھ وابستہ تربیت یافتہ گریجویٹوں کو روز گار کے مواقعے دستیاب کرانے کے لئے شروع کی گئی تھی۔سکیم کی رو سے ان نوجوانوں کے تکنیکی پس منظر سے استفادہ کرتے ہوئے انہیں تعمیرات اور بنیادی ڈھانچے کو بڑ ھاوا دینے کے کاموںمیں شامل کیا جاتا ہے۔چیف سیکرٹری بی بی ویاس، کمشنر سیکرٹری مکانات و شہری ترقی کے بی اگروال،مختلف محکموں کے انتظامی سیکرٹری، چیئرمین جے کے بنک پرویز احمد اور کئی محکموں کے سربراہاں اور اعلیٰ افسران بھی میٹنگ میں موجود تھے۔