سیال سوئی کے لوگوں کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

راجوری//کالاکوٹ کے سیال سوئی گائوں کے لوگوں نے راجوری ۔کالاکوٹ سڑک پراحتجاج کیا جس کی وجہ سے سڑک پرکئی گھنٹوں تک آمدورفت ٹھپ رہی۔اس دوران مظاہرین نے الزام لگایاکہ مقامی انتظامیہ کچھ سیاسی لیڈران کے سامنے جھک چکی ہے ۔انہوں نے کہاکہ افسران کے سامنے کچھ سیاسی لیڈران ماڈل کوڈآف کنڈیکٹ کی خلاف ورزی کررہے ہیں اوران کے خلاف کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی جارہی ہے۔یہ احتجاج سومواراورمنگلوارکی رات پاورسٹیشن پرہوئے واقعہ کی روشنی میں کیاگیا۔بتایاجاتاہے کہ سیال سوئی کے کچھ لوگ پائورسٹیشن گزشتہ رات جمع ہوئے اورانہوں نے مقامی کنبے کو بجلی کنکشن پراعتراض جتایاجس کے بعد ایس ایچ اوکالاکوٹ موقعہ پرپہنچے اوروہ موقعہ سے فرارہوگئے۔منگل کی صبح سکولی طلباء اورمقامی لوگوں نے کالاکوٹ ۔راجوری سڑک پرجمع ہوکراحتجاج شروع کردیااورسڑک کوآمدورفت کیلئے ٹھپ کردیا۔اس دوران انتظامیہ نے انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی اورکہاکہ کچھ سیاسی لیڈران لوگوں کوپریشان کررہے ہیں اورکھلے عام ضابطہ اخلا ق کی خلاف ورزی کررہے ہیں۔انہوں نے ایس ایچ اوکالاکوٹ کے تبادلہ کامطالبہ کیا۔اس سے پہلے کچھ افسران نے مظاہرین کوسمجھانے کی کوشش کی لیکن وہ اس میں ناکام رہے۔بعدازاں ایڈیشنل ایس پی نوشہرہ ماسٹرپاپسی ،سب ڈویژنل مجسٹریٹ کالاکوٹ اوردیگرافسران نے موقعہ پرپہنچ کرلوگوں کوتمام مسئلے حل کرانے کی یقین دہانی کرائی۔افسران نے لوگوں سے کہاکہ اگرکوئی شخص کسی کے خلاف قوانین کی خلاف ورزی کی شکایت درج کرائے گاتوفوری کاروائی کی جائے گی۔