سیاسی جماعتوں کی میٹنگ کا انعقاد

 جموں//سپیکر جموں کشمیر قانون ساز اسمبلی کویندر گپتا نے آنے والے بجٹ اجلاس جو 2 جنوری 2018 سے شروع ہونے والا ہے کی کاروائی بحسنِ خوبی انجام دینے کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں سے تعاون طلب کیا ۔ سپیکر نے یہاں سیاسی جماعتوں کی میٹنگ کی صدارت کے دوران اُمید ظاہر کی کہ ارکان اجلاس کے دوران اُن کیلئے مقرر کئے گئے وقت کا منصفانہ استعمال کر کے عوامی اہمیت کے زیادہ سے زیادہ مسائل کو اجاگر کریں گے ۔ وزیر برائے پارلیمانی امور عبدالرحمان ویری ، قانون ساز علی محمد ساگر ، میاں الطاف احمد ، نوانگ رگزن جورا ، محمد یوسف تاریگامی ، حکیم محمد یاسین ، ست پال شرما ، محمد یوسف بٹ اور راجیش گپتا میٹنگ میں موجود تھے ۔ سپیکر نے کہا کہ عوامی اہمیت کے مسائل اٹھانے کیلئے ہر سیاسی جماعت کو مساوی موقع دیا جائے گا ۔ انہوں نے ارکان سے اپیل کی کہ وہ اجلاس کے دوران ترقیاتی اور دیگر اہم مسائل کو اجاگر کریں ۔ وزیر برائے پارلیمانی امور نے میٹنگ کو یقین دلایا کہ حکومت دورانِ اجلاس حزبِ اختلاف کے ارکان کو معقول وقت فراہم کرے گی ۔ انہوں نے سینئر قانون سازوں سے اجلاس کی کاروائی بحسنِ خوبی انجام دینے کیلئے تعاون طلب کیا ۔ انہوں نے سپیکر کو عوامی مسائل کے ازالہ کیلئے ارکان کی جانب سے پیش کی گئی تجاویز پر غور کرنے کیلئے کہا ۔ میٹنگ میں موجود تمام سیاسی جماعتوں نے سپیکر کو ایوان کی کاروائی دوستانہ طریقہ کار کے تحت چلانے کیلئے اپنا پورا تعاون دینے کا یقین دلایا ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ ایوان کی کاروائی نتیجہ خیز بنانے کیلئے ضروری اقدامات اٹھائیں گے ۔ انہوں نے سٹارڈ اور ان سٹارڈ سوالات کا جواب ارکان کو قبل از وقت ارکان کو فراہم کرنے کی تجویز پیش کی تا کہ وہ ضمنی سوالات کیلئے تیاری کر سکیں ۔ دورانِ میٹنگ آنجہانی کوشک بکولہ  رنپوچے کی حیات پر بھی مفصل روشنی ڈالی گئی اور سپیکر نے کہا کہ آنجہانی کے 100 ویں جنم دوس کو منانے کیلئے اسمبلی کی لابی میں اُن کی ایک تصویر آویزاں کی جائے گی ۔ انہوں نے سٹیٹ کاسٹچیونٹ اسمبلی ، قانون ساز اسمبلی کے رُکن، رُکنِ پارلیماناور منگولیہ کے بھارتی سفیر کی حثیت سے آنجہانی کی خدمات کو یاد کیا ۔ سیکرٹری اسمبلی ، سپیشل سیکرٹری ، ایڈیشنل سیکرٹری ، ڈپٹی سیکرٹری اور اسمبلی سیکرٹریٹ کے دیگر اعلیٰ افسران میٹنگ میں موجود تھے ۔