سکولی بچوں کا احتجاجی مظاہرہ

 بانہال // ضلع رام بن میں کھڑی۔ ناچلانہ رابطہ سڑک پر ٹرانسپورٹ کی کمی اور ڈرائیوروں کی طرف سے سکولی بچوں کو گاری میں سوار نہ کرنے کے خلاف  کھڑی تحصیل ہیڈ کواٹر کے نجی سکولوں سے وابسطہ سکولی بچوں نے ناچلانہ کے مقام احتجاجی مظاہرے کئے اور مقامی رابطہ سڑک کو کم از کم ایک گھنٹے تک بند کر دیا۔ احتجاجی مظاہرے میں شامل بچوں کا کہنا ہے کہ ناچلانہ اور کھڑی کے درمیان چلنے والی ٹاٹاسومو اور بسیں سکولی بچوں کو گاڑیوں میں سوار نہیں ہونے دیتے ہیں جس کی وجہ سے انہیں سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹرانسپورٹوں کی من مانی اور غنڈہ گردی کا مظاہرہ کرنے کی وجہ سے روزانہ بچوں کو سخت تکلیف اٹھانا پڑتی ہے اور انہیں ایک طرف سے پانچ کلومیٹروں کا پیدل سفر کرنے پر مجبور کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کھڑی میں قائم کئی نجی سکولوں میں زیر تعلیم ہیں اور ان کی تعلیم متاثر ہو رہی ہے۔ احتجاج پر آمادہ بچوں نے بتایا کہ ریلوے ٹنل کو تعمیر رکنے والی کمپنی افکان نے سکولی بچوں کیلئے ناچلانہ اور کھڑی کے درمیان ایک بس سروس کو شروع کر رکھا ہے جو کبھی کبھار ہی چلتی ہے اور اگر چلتی بھی ہے تو نجی سکولوں میں پڑھنے والے بچوں کو بس میں چڑھنے نہیں دیا جاتا ہے اور مسافر گاڑیوں کے ڈرائیور اور کنڈیکٹر سکولی بچوں کے ساتھ سخت ناروا سکول کرتے ہیں جو افسوناک ہے۔ بعد میں سرکاری حکام نے انہیں یقین دلایا کہ وہ ان کے مسئلے کو اعلی حکام سے اٹھا کر ٹرانسپورٹ کی کمی کو حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کر ینگے۔