سکمزکا25واں پوسٹ گریجویٹ ریسرچ پرزنٹیشن پروگرام | کووِڈ19نے نسل انسانی کی بقاء کو دائو پر لگایا:ڈاکٹر آہنگر

 سرینگر//شیرکشمیر انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ میں 25ویں پوسٹ گریجویٹ ریسرچ پرزنٹیشن پروگرام کا افتتاح کیا گیا۔اس کااہتمام نیورولوجی شعبہ نے کیا تھا اور اس دوروزہ پروگرام کے دوران137تحقیقی مقالے پیش ہوں گے۔موجودہ وباء کے پیش نظر یہ پروگرام جزوی طور ورچیول طریقے پر منعقد ہوا ۔افتتاحی تقریب میں محدود تعدادمیں شرکاء نے حصہ لیااوراس دوران کووِڈ سے بچائو کے پروٹوکول پرسختی سے عمل کیا گیا۔نیورولوجی شعبے اورآرگنائزنگ چیئرمین نے مہمانوں کاخیرمقد م کیا اورامیدظاہر کی کہ اس پروگرام سے نوجوان اسکالروں کو فائدہ پہنچے گا۔انہوں نے کہا کہ اس پروگرام سے ہم سب مستفید ہوں گے اور ہم ایک دوسرے کے ساتھ خیالات اور معلومات کا تبادلہ کریں گے۔.۔سکمزکے سربراہ ڈاکٹر اے جی آہنگر نے اس کااہتمام کرنے کیلئے شعبے کی سراہنا کی ۔انہوں نے کہا کہ پوسٹ گریجویٹ ریسرچ پرزنٹیشن پروگرام ماہرین کے روبروں اپنے تحقیقی مقالے پیش کر نے اور سیکھنے کاایک بہترین پلیٹ فارم ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ تقریب ہمیشہ سکمزکی پہچان رہی ہے اور اس نے ہمیشہ تحقیق کو ترجیح دی ہے جواس میڈیکل یونیورسٹی کا بیش بہا سرمایہ ہے ۔عالمی وباء کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے سبھوں سے اس بیماری کو قابو کرنے کیلئے رہنماخطوط پر عمل کرنے کی تاکید کی۔انہوں نے اسپتال کے وسائل چاہے وہ آکسیجن سلینڈر ہو یا ادویات یا انسانی وسائل جیسے طبی ونیم طبی عملہ، کے منصفانہ استعمال پرزوردیااور کہا کہ یہ موجودہ بحران میں وقت کی ضرورت ہے ۔انہوں نے اس وباء کامقابلہ کرنے کیلئے سرجوڑ کے بیٹھنے اور ہاتھ ملاکر حکمت عملی مرتب کرنے پرزور دیا۔انہوں نے کہا کہ تیسری عالمی جنگ ہم ایک پوشیدہ دشمن ،کورونا وائرس سے لڑ رہے ہیں،جس نے نسل انسانی کی بقاء کودائو پر لگایا ہے ۔تقریب سے ڈین میڈیکل فیکلٹی سکمزڈاکٹر عمر جاویدشاہ،نیوروسرجری کے سابق صدرشعبہ ڈاکٹر محمدافضل وانی نے بھی خطاب کیا۔میڈیکل کالج سرینگر کی پرنسپل ڈاکٹر سامعہ رشید بھی اس موقعہ پر موجود تھیں ۔