سکاسٹ جموں کے انتظامی بورڈ کی 35ویں میٹنگ  بیداری ، تربیت اور ثانوی زراعت کو اَپنانا کسانوں کی خوشحالی کی کلید : اَتل ڈولو

جموں//وائس چانسلر شیر کشمیر یونیورسٹی آف ایگری کلچرل سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی سکاسٹ جموں پروفیسر جے پی شرما کی صدارت میں پیر کو مین کیمپس چھتہ میں 35ویں بورڈ آف مینجمنٹ میٹنگ منعقد ہوئی۔ ابتداً ، چیئرمین بورڈ آف مینجمنٹ سکاسٹ جموں نے تمام ممبران کا خیر مقدم کیا اور یونیورسٹی کی طرف سے تعلیمی ، تحقیقی اور توسیع میں کئے گئے مختلف اِقدامات پر روشنی ڈالی ۔ پروفیسر شرما نے یونیورسٹی کی نمایاں کا میابیوں یعنی وائس چانسلر ٹو وِلیج پروگرام ، فصلوں کی 21 اَقسام کا اجرأ ، تین نئی فیکلٹیوں کی منظوری کے بارے میں بات کی جس میں باغبانی اور جنگلات کی فیکلٹی ، فیکلٹی آف ایگر ی کلچرل اِنجینئرنگ ، ایڈ فیکلٹی آف ڈیری ٹیکنالوجی ، بی ایس سی میں ڈگری پروگراموںکی باغبانی ، ایم ایس سی ( ایگری کلچر) بیج ٹیکنالوجی ، پی ایچ ڈی ایگری بزنس مینجمنٹ اور فلوری کلچر ، رام بن اور کشتواڑ میں دو نئے کے وِی کے کا کام ، زرعی شعبے کو فروغ دینا ، سٹارٹ اپس اور پانچ روزہ کسان میلہ وغیرہ شامل ہیں۔پروفیسر شرما نے ساتویں کا نووکیشن کے بارے میں بتایا کہ 1,305 ڈگریاں دی جائیں گی جن میں اعزازکاسہ (2) کا ایوارڈ بھی شامل ہے ۔ایڈیشنل چیف سیکرٹری محکمہ زرعی پیدا وار اَتل ڈولو نے یونیورسٹی کے اِقدامات ، پیش رفت اور کامیابیوں پر اطمینان کا اِظہا رکیا ۔اُنہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کے کسانوں کی آمدنی میں اِضافہ کرنے کی ضرورت ہے اور اِس کے لئے ویلیو ایڈیشن اور پروسسنگ پر توجہ مرکوز کرنے والے اہم شعبے ہیں۔اُنہوں نے مشورہ دیا کہ ثانوی زراعت کو اَپنانے کے لئے کسانوں کی بیداری ، حوصلہ افزائی اور تربیت دینے کے لئے گائوں ، ضلع او ریونیورسٹی کی سطح پر تین نکاتی حکمت عملی کے پروگرام کو عملانے کی ضرورت ہے۔دورانِ میٹنگ اہم ایجنڈے کو منظور کیا گیا ہے جس میں سکاسٹ جموں کے کانووکیشن کا اِنعقاد اور یونیورسٹی کے فارغ التحصیل کو ڈگریاں دینا، ساتویں کانووکیشن میںمیرٹ کے سر  ٹیفکیٹ اور گولڈ میڈل دینا، سلیکشن کمیٹی ( ایس ) کی سفارشات پر غور اور منظور ی ،سی اے ایس کے تحت اساتذہ کی تقرری کے لئے فیکلٹی آف ایگری کلچر کے موجودہ ڈویژنوں کی فیکلٹی آف ایگر ی کلچر ، ایگر ی کلچر اِنجینئرنگ اور ہارٹی کلچر اینڈ فارسٹری میں رِی سٹرکچرنگ ، تعمیر نو کے ساتھ مذکورہ فیکلٹیز کے مختلف ڈویژنوں ڈیری فیکلٹی میں  69 نئی منظور شدہ پوسٹوں کی ایڈجسٹمنٹ ،سکاسٹ جموں سینٹر برائے اِختراعی انکیوبشن اینڈ انٹرپرینیور شپ کا قیام،زراعت میں مصنوعی ذہانت اور مشین لرننگ کے مرکز کا قیام ، کالج فارووکیشنل ایجوکیشن کا قیام اور ‘‘ آرگنک فارمنگ ریسر چ سینٹر ‘‘ کا نام بدل کر ’’ مرکز برائے نامیاتی اور قدرتی کاشت کاری وغیرہ شامل ہیں۔اِس سے قبل یونیورسٹی کے رجسٹرار ڈاکٹر ایس کے گپتا نے یونیورسٹی کی سرگرمیوں کے بارے میں ایک پاور پوائنٹ پرزنٹیشن پیش کی اور بورڈ کے سامنے میٹنگ کا ایجنڈا پیش کیا۔میٹنگ میں سیکرٹری منصوبہ بندی اور ترقی محکمہ ڈاکٹر راگھو لنگر ، وائس چانسلر نانا جی دیشمکھ ویٹرنری سائنسز یونیورسٹی جبل پور ڈاکٹر ایس پی تیواری ، اے ڈی جی ( کوآرڈی نیشن ) آئی سی اے آر نئی دہلی ڈاکٹر شیو پر سیّد کیموتھی ، سابق ڈین فیکلٹی آف ایگری کلچر اور سابق ڈائریکٹر یوجی سی اکیڈمک سٹاف کالج شعبہ اینٹومولوجی، انسٹی چیوٹ آف ایگر ی کلچر سائنسز  بنارس ہندو یونیورسٹی وارانسی ڈاکٹر جنار دن سنگھ ، ڈائریکٹر کوڈزفائنانس ڈیپارٹمنٹ جموںوکشمیر یوٹی شادی لال پنڈتااور دیگر متعلقہ اَفراد نے شرکت کی۔دریں اثنأ، جاری 7ویں کانووکیشن کے دوسرے دن یونیورسٹی کے بہترین ماسٹر اور ڈاکٹریٹ طالب علم کے لئے وائس چانسلر کے گولڈ میڈل ایوارڈ پر ایک سیشن کا انعقاد کیا گیا۔تقریباً 35 ماسٹر اور ڈاکٹریٹ سکالروں نے ایوارڈ کے لئے مقابلہ کیا۔ اس موقع پر سکاسٹ جموں کا فسٹ الیومنیو میٹ منعقد کیا گیا جس میں سکاسٹ جموں کے سابق طلباء نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ ثقافتی پروگرام پیش کیا گیا جس میں طلباء نے شرکت کرکے حاضرین کو محظوظ کیا۔