سڑک کے کناروں پر غیر قانونی کار پارکنگ

 
 سرینگر//ریذیڈنسی روڑ اورکرسو راجباغ میں ماڈرن ہسپتال اور گردونواح میں سڑکوں پر غیر قانونی طور پر گاڑیوںکی پارکنگ کے نتیجے میں سڑک پر جام لگ جاتا ہے جس کی وجہ سے ہسپتال آنے والے مریضوں اور دیگر راہگیروں کو سخت دقتوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔کئی مسافروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہسپتال کے باہر لوگ غیر قانونی طور پر گاڑیوں کو پارک کر کے رکھتے ہیں اور وہاں موجود تنگ سڑک کی وجہ سے مسافر آمد ورفت کے دوران جام میں پھنس جانے کے نتیجے میں کافی مشکلات کا سامنا رہتا ہے ۔وہاں کے تاجروں کا کہنا ہے کہ کبھی کبھار ہسپتال میں ایمریجنسی کے وقت مریضوں کو لیکر آنے والی ایمبولنس گاڑیاںبھی وہاں ٹریفک جام کی وجہ سے پھنس جاتی ہیں ۔ایسا ہی حال ریذیڈنسی روڑ کا بھی ہے جہاںسڑک کے کناروں پر کھڑا کی گئی گاڑیوں اٹھانے کے حوالے سے محکمہ ٹریفک کی جانب سے کوئی بھی کارروائی عمل میں نہیں لائی جاتی جس کے سبب وہاں پر بھی نہ صرف ٹریفک جام رہتا ہے بلکہ راہگیروں کو بھی چلنے پھرنے میں سخت دقتیں پیش آتی ہیں ۔ لوگوں کا کہنا تھا کہ آئی جی پی ٹریفک بسنت رتھ کے آنے کے بعد انہوں نے خوشی کا اظہار کیا تھا کہ شاہد اب شہر میں ٹریفک کا نظام بدلے گا کیونکہ انہوںنے دعویٰ کیا تھا کہ سرینگر شہر میں ٹریفک نظام کو بدلا جائے گا اور لوگوں کو بھی کسی آمدورفت کے دوران مشکلات نہیں ہو گی لیکن یہ دعویٰ سراب ہی ثابت ہوااور شہر کا ٹریفک نظام نہیں بدلا ۔لوگوں نے اُن سے مطالبہ کیا ہے کہ سڑکوں پر غیر قانونی طور رکھی گئی گاڑیوں کو ہٹانے کے اقدامات کئے جائیں تاکہ لوگوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔