سڑک پر پھسلن سے گاڑی لڑھک گئی

کرالہ پورہ (کپوارہ)//کرالہ پورہ کپوارہ میں پیر کے روز سڑک کے دلدوز حادثہ میں ایک دوشیزہ سمیت 2 افرادلقمہ اجل جبکہ 3دیگر شدید طور زخمی ہوئے ۔عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ معمولی برف باری کے نتیجے میں سڑک پر پھسلن پیدا ہو گئی جس کے دوران گا ڑیو ں کو چلنے پھرنے میں سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ پیر کی صبح راشن پورہ کرالہ پورہ سے آرہی ایک نجی گا ڑی زیر نمبر HR51AU/7420جب خزان مٹی پل کے نزدیک پہنچ گئی تو پھسلن کی وجہ سے گا ڑی ڈرائیور کے قابو سے باہر ہو گئی اور لڑھک کرنالہ میں جاگری ۔حادثہ کے بعد پولیس ،فوج اور مقامی لوگو ں کی ایک بڑی تعداد پہنچ گئی اور بچائو کارروائی شروع کی تاہم نالہ ہد میں پانی کی سطح زیادہ وجہ سے بچائو کارروائی میں دقتیں آئیں ۔تاہم بعد میں جب گا ڑی میں سوار  5افراد کو باہر نکالا گیا تو ان میں 19سالہ دوشیزہ عصمہ اقبال دختر محمد اقبال بٹ لقمہ اجل بن گئی تھی جبکہ 4زخمیو ں 55سالہ محمد مقبول بٹ ،بشیر احمد بیگ ،آصف احمد بٹ اور 40سالہ جبینہ بیگم زوجہ فاروق احمد بٹ کو سب ضلع اسپتال کرالہ پورہ میں علاج و معالجہ کے لئے دا خل کیا گیا۔ ابتدائی علاج کے بعد زخمیوں کوسب ضلع اسپتال کپوارہ اور بعد میں سرینگر منتقل کیا گیا۔ جہا ں ایک زخمی محمد مقبول بٹ زخمو ں کی تاب نالاکر صدر اسپتال میں دم تو ڑ بیٹھا، اس طرح حادثہ میں مرنے والوں کی تعداد 2تک پہنچ گئی ۔ دو کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔جو اں سال عصمہ اقبال کی لاش کو جب ان کے آ بائی گائو ں راشن پورہ پہنچائی گئی تو وہا ںکہرام مچ گیا ۔عصمہ کو ابھی سپرد خاک کیا جارہا تھا کہ محمد مقبول بٹ کے دم توڑنے کی خبر وہا ں پہنچ گئی جس کے با عث راشن پورہ علاقہ میں ما حول مزید افسردہ ہوگیا اور ہر طرف آہ و فغاں تھا ۔ا س دوران زانگلی کپوارہ میں اس وقت درجنو ں راہگیر بال بال بچ گئے جب پھلسن کی وجہ سے سومو گاڑی ڈرائیور کے قابو سے باہر ہوکر اپنے آپ رک گئی۔