سڑک حادثات پر بشری حقوق کمیشن کا ازخود نوٹس

سرینگر//سرینگر ۔جموں شاہراہ پر گزشتہ روز ٹریفک کے دلدوز حادثے میں22مسافروں کی ہلاکت اور دیگر13کے زخمی ہونے کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے بشری حقوق کے ریاستی کمیشن نے کہا ہے کہ رپورٹوں سے ابتدائی طور پرمعلوم پڑتا ہے کہ یہ حادثات محکمہ ٹریفک کی طرف سے نگرانی میں کمی اور سڑکوں کی وجہ سے ہو رہے ہیں۔ سڑک کے ایک دلدوز حادثے میں سرینگر جموں شاہراہ پر رام بن کے نزدیک کیلا موڑ پر 22افراد لقمہ اجل بن گئے تھے،جبکہ 13 مسافر زخمی ہوئے تھے۔اس دوران بشری حقوق کے ریاستی کمیشن کے چیئرمین جسٹس(ر) بلال نازکی نے اس ٹریفک حادثے کا از خود نوٹس لیا اور ریاستی پولیس کے سربراہ و انسپکٹر جنرل آف پولیس ٹریفک کو6ہفتوں میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی۔جسٹس بلال نازکی نے اس بات کا مشاہدہ کیا کہ جموں کشمیر میں ٹریفک حادثات کثرت سے ہو رہے ہیں،جس کے نتیجے میں قیمتی جانوں کا زیاں ہوتا ہے۔جسٹس(ر) بلال نازکی نے کہا’’ حادثات سے متعلق رپورٹوں سے یہ ابتدائی طور پر پتہ چلتا ہے کہ ٹریفک انتظامیہ کی طرف سے نگرانی میں کمی اور سڑکوں کی حالات کی وجہ سے یہ حادثات رونما ہوتے ہیں‘‘۔ کمیشن نے ریاستی پولیس کے سربراہ اور آئی جی ٹریفک کے علاوہ محکمہ تعمیرات عامہ کے انتظامی سیکریٹری کو نوٹسیں روانہ کرتے ہوئے اس معاملے میں6ہفتوں کے دوران کمیشن میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی۔ جسٹس(ر) بلال نازکی کی طرف سے آئی جی ٹریفک کے نام نوٹس میں مزید کہا گیا ہے کہ رپورٹ میں امسال یکم جنوری سے ہوئے سڑک ٹریفک حادثات،اور ان حادثات میں جان بحق ہوئے اور زخمی ہونے والوں لوگوں کی مکمل تعداد بھی درج کریں۔