سچیت گڑھ سیکٹر میں ہندوپاک افواج کی میٹنگ | سرحدوں پر امن بنائے رکھنے پر اتفاق

جموں//ہندپا ک کے مابین فروری کے مہینے میں جنگ بندی معاہدے پر مکمل عملدرآمد پر اتفاق کے بعد سچیت گڑھ سیکٹر میں پہلی بار پاکستانی رینجرس اور بی ایس ایف کے مابین پہلی میٹنگ ہوئی۔ سیکٹر کمانڈر سطح پر ہوئی تفصیلی میٹنگ میں بی ایس ایف کی سربراہی ڈی آئی جی سرجیت سنگھ جبکہ پاکستانی رینجرس کی جانب سے بریگیڈئر مرید حسین سیکٹر کمانڈر سیالکوٹ کی سربراہی میں وفد نے ایک دوسرے سے ملاقات کی ۔ بی ایس ایف ترجمان کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق پاکستانی رینجرس اور بی ایس ایف کے مابین پہلی سیکٹر میٹنگ منعقد ہوئی جس میں مختلف اموار پر سیر حاصل بحث ہوئی ۔ بی ایس ایف نے ڈرون معاملات کو ترجیحی بنیادوں پر اجاگر کیا اور پاکستان پر زور دیا گیا کہ وہ ڈرون سرگرمیوں ، ٹنل کھودنے اور دیگر معاملات پر فوری طور پر روک لگائیں ۔ ترجمان کے مطابق اس موقعہ پر ڈرون سرگرمیوںکو لیکر بی ایس ایف نے احتجاج کیا ۔ ترجمان کے مطابق میٹنگ خوشگوار ماحول میںہوئی اور دونوں جانب سے اس بات پر اتفاق ہوا کہ سرحدوں پر امن بنائے رکھنے کیلئے ایک دوسرے کیساتھ رابطوں کو مزید استوار کرنے اور سابقہ فیصلوں کو عملانے کیلئے ہر ممکن اقدامات اٹھائیں جائے گے ۔