سوپور میں فورسز ناکہ پارٹی پر اندھا دھند فائرنگ | 3فورسز اہلکار ہلاک

سوپور // شمالی کشمیر کے قصبہ سوپور میں سنیچر کو جنگجوئوں نے ایک بڑے حملے میں فورسز کے تین اہلکار ہلاک جبکہ ڈرائیور سمیت دو اہلکار شدید طور پر زخمی ہوئے۔ حملہ آور بعد میں فرار ہوئے۔جنگجوئوں کی طرف سے یہ حملہ دن دھاڑے کیا گیا۔یہ واقعہ سوپور بائی پاس پر احد بب کراسنگ کے نزدیک اس وقت پیش آیا جب سی آر پی ایف کی ایک پیٹرولنگ پارٹی یہاں کھڑی تھی۔سی آر پی ایف ترجمان پنکچ سنگھ نے بتایا کہ جنگجوئوں کی طرف سے سوپور کے نور باغ بائی پاس پر 179 بٹالین سی آر پی ایف کی گاڑی پر اندھا دھند فائرنگ کی گئی۔پولیس نے کہا کہ قصبہ سوپور کے نور باغ علاقہ میں احد بب کراسنگ پر کھڑی ایک سی آر پی ایف گاڑی کو نشانہ بناکر جنگجوئوں کی طرف سے فائرنگ کی گئی جس کے نتیجے میں کم از کم پانچ سی آر پی ایف اہلکار زخمی ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ زخمی اہلکاروں کو سب ضلع ہسپتال سوپور لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے دو اہلکاروں کو مردہ قرار دیا۔ بعد ازاں ایک اور زخمی دم توڑ بیٹھا۔ زخمیوں کی تعداد دو بتائی جارہی ہے جن میں ایک پولیس اہلکار بھی شامل ہے۔واقعہ کے بعد پورے علاقے کو گھیرے میں لیا گیا اور فورسز کی مزید کمک حاصل کر کے تلاشی آپریشن شروع کیا گیا۔ہلاک شدہ فورسز اہلکاروں کی شناخت ہیڈ کانسٹیبل راجیو شرما، کانسٹیبل پرمار ستپال اورکانسٹیبل بی بکرے کے طور پر کی گئی جبکہ زخمی دو اہلکاروں میں ہیڈکانسٹیبل بسواجیت گھوش اورکانسٹیبل ڈرائیور جاوید احمد شامل ہیں۔

پولیس بیان

پولیس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ  سہ پہر قریب ساڑھے 5بجے جنگجوئوں نے پولیس اور سی آر پی ایف کی ایک ناکہ پارٹی کو نشانہ بنانے کی غرض سے احد بب کراسنگ کے نزدیک فائرنگ کی۔اس حملہ میں 5سی آر پی ایف اہلکار زخمی ہوئے، جنہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا جہاں تین زخمی دم توڑ بیٹھے۔پولیس نے مارے گئے اہلکاروں کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ہے۔