سوپورحملے میں میونسپل کونسلراور پولیس اہلکاروں کی ہلاکت پرسیاسی جماعتیں برہم

سری نگر//سوپور میں جنگجو ئوں کے مبینہ حملے میں ایک میونسپل کونسلر،اور ایک پولیس اہلکار کے مارے جانے کی سیاسی جماعتوں نے پرزورالفاظ میں مذمت کی ہے اور اِسے بزدلانہ،غیرانسانی،اور شرمناک قرار دیا۔ایک بیان میں نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور سابق وزیراعلیٰ عمرعبداللہ نے سوپور میں میونسپل دفتر پر ہوئے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور انسانی جانوں کے زیاں پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے زخمی ہوئے افراد کی فوری صحت یابی کیلئے دعا کی۔ اُن کا کہنا تھا کہ نیشنل کانفرنس اس حملے کی مذمت کرتی ہے، مہذب اقوام میں اس قسم کے واقعات کیلئے کوئی جگہ نہیں۔ انہوں نے مارے گئے افراد کے لواحقین کیساتھ اظہارِ یکجہتی کی اور دعا کی کہ اللہ انہیں صبر جمیل عطا کرے۔ پارٹی جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، اراکین پارلیمان محمد اکبر لون، حسنین مسعودی اور ضلع صدر بارہمولہ جاوید احمد ڈار نے بھی حملے کی مذمت کی ہے۔ جموں کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی نے سوپور میں جنگجوحملہ کی مذمت کرتے ہوئے اسے شرمناک قراردیا۔ایک بیان میں پردیش کانگریس نے سوپورمیں جنگجوئوں کے حملے جس میں ایک میونسپل کونسلر اور ایک ایس پی او ہلاک ہوگئے،کی مذمت کی۔بیان میں اس حملہ کوناقابل قبول اور شرمناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ سماج کے ہرطبقے کو اس کی مذمت کی جانی چاہیے۔پارٹی نے مہلوک کونسلراور ایس پی اوکے کنبوں کے ساتھ ہمدردی اور یکجہتی کااظہار کرتے ہوئے مرحومین کے ارواح کیلئے ابدی سکون کی دعا کی ہے۔پارٹی نے حکومت پر زوردیا کہ وہ ایسے بزدلانہ اور غیرانسانی واقعات کو روکنے کیلئے فوری اقدام کریں۔اپنی پارٹی کے صوبائی صدر محمد اشرف میر نے بھی سوپور میں جنگجو حملے میں میونسپل کونسلر اور ایک ایس پی اوکے ہلاک ہوجانے پر دکھ اور افسوس کااظہار کرتے ہوئے اس حملے کی مذمت کی۔ایک بیان میں میر نے کہا کہ ایسے واقعات سے لوگوں کی مشکلات اور مسائل میں اضافہ ہوجاتاہے اور مہذب دنیا میں ان کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ منتخب عوامی نمائندوں پر ایسے غیر انسانی حملوں سے کچھ حاصل نہیں ہوگابلکہ لوگوں کے دکھوں اور مصیبتوں میں اضافہ ہوگا۔ انہوں نے حکومت پرزوردیا کہ وہ ان واقعات کا فوری نوٹس لیں اور سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہوکرکارکنوں کی حفاظت کیلئے حفاظتی اقدام کریں۔اپنی پارٹی کے صوبائی صدر نے اس حملے میں ایک پولیس اہلکار کے مارے جانے پربھی دکھ کااظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ معصوم کی ہلاکت جموں کشمیر کے امن اور خوشحالی کے مفاد میں کسی طور نہیں ہیں۔ادھر بھارتیہ جنتاپارٹی نے سوپور میں مشتبہ جنگجوئوں کے ایک حملے میں پارٹی سے وابستہ ایک کونسلر اورایک پولیس اہلکارکے ازجان ہونے پرسخت دکھ ظاہر کرتے ہوئے اس حملے کوبزدلانہ اورقابل مذمت قرار دیا۔میر نے کہا کہ یہ افسوسناک واقعہ اس دن پیش آیا جب پوری دنیا شب برات منانے کی تیاریاں کررہی تھیں۔کشمیرنے پہلے ہی گزشتہ تین دہائیوں کے دوران کافی ہلاکتیں اور تباہی دیکھی ہے اور اب یہ تشدد کہیں رُک جاناچاہیے تاکہ لوگ اطمینان کی سانس لے سکیں۔انہوں نے مرحومین کی روح کے ابدی سکون کی دعا کی اورغمزدہ کنبوں کے ساتھ یکجہتی کااظہار کیا۔  بھاجپاکی جموں وکشمیرشاخ کے جنرل سیکرٹری اشوک کول نے ایک بیان میں اس حملے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے مہلوک کونسلر ریاض احمد اورایس پی ائو شفاعت نذیر کے لواحقین کیساتھ دلی ہمدردی اورتعزیت کااظہارکرتے ہوئے زخمی ہوئے کونسلرکی جلد صحت یابی کیلئے دعاکی۔اشوک کول نے جنگجوئوں کے حملے کوبزدلانہ حرکت قرار دیتے ہوئے کہاکہ ایسے حملوں سے بھاجپا لیڈروں اورکارکنوں کے حوصلے پست نہیں ہوںگے ۔اشوک کول نے مزیدکہاکہ ایسے حملوںکامقصداس خطے میں امن وامان کی صورتحال کومتاثرکرناہے ۔بھارتیہ جنتا پارٹی کے سینئر رہنمااور اقلیتی مورچہ کے ترجمان ہلال جان نے بھی سوموار کو سوپور میں جنگجو حملے میں میونسپل کونسلراور ایک پولیس اہلکارکے مارے جانے کی مذمت کی ہے۔ایک بیان میں جان نے کہا کہ ایسے تشدد آمیزواقعات سے لوگوں کی مشکلات بڑھ جاتی ہیں اورمہذب دنیا میں ان کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے ۔انہوں نے مرحومین کے ارواح کے ابدی سکون کی بھی دعا کی۔کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا مارکسسٹ کے رہنما یوسف تاریگامی نے ایک بیان میں سوپور میں جنگجو حملے میں ایک میونسپل کونسلراور ایک پولیس اہلکارکی ہلاکت کی مذمت کرتے ہوئے اِسے غیرانسانی اور وحشیانہ قرارد یا۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی قسم کا تشددقابل مذمت ہے اور شہری ہلاکتوں پر فوری طورروک لگانے کی ضرروت ہے ۔انہوں نے غمزدہ کنبوں کے ساتھ یکجہتی کابھی اظہار کیا۔ اس دوران سرینگر میونسپل کارپوریشن کے میئر جنیدمتو نے ایک ٹوئٹ میں  اس حملے کی مذمت کی اور غمزدہ خاندانوں کے ساتھ یکجہتی کااظہار کیا۔