سونہ مرگ میں 8جنوری کو فیسٹول

کنگن//محکمہ سیاحت کی طرف سے سونہ مرگ میں 8 جنوری کو ایک فیسٹول منعقد کیا جارہاہے۔ گلمرگ اورپہلگام کی طرح حکومت نے امسال سونہ مرگ کو موسم سرما کے دوران کھلا رکھنے کا اعلان کیا ہے تاکہ وادی کشمیر کے دیگر سیاحتی مقامات کی طرح سیاح موسم سرما کے دوران سونہ مرگ کی خوبصورتی سے لطف اندوز ہوسکیں اورزیادہ سے زیادہ سیاحوں کو راغب کیا جائے ۔سونہ مرگ میں بھاری برفباری کی وجہ سے قریب پانچ ماہ تک بند رہنے کی وجہ سے یہاں سیاحتی شعبہ سے وابستہ لوگوں کا روزگار متاثر رہتا تھا اور سیاح موسم سرما کے دوران یہاں کی سیرو تفریح کیلئے نہیں آتے تھے ۔نومبر یا دسمبر میں بھاری برفباری کی وجہ سے سونہ مرگ کو آمدورفت کیلئے بند کیا جاتا تھا جس کی وجہ سے سونہ مرگ کی سیرو تفریح پر آنے والے سیاحوں کو سونہ مرگ سے 11کلو میٹر قبل گگن گیر کے مقام سے مایوس ہوکر واپس لوٹنا پڑتا تھا۔سونہ مرگ ڈیولپمنٹ اتھارٹی ،محکمہ صحت ،پولیس ، ٹورا زم محکمہ اورجل شکتی محکمہ بجلی کو یہاں تعینات رکھا گیا ہے تاکہ موسم سرما کے دوران یہاں آنے والے سیاحوں کو کسی قسم کے مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔سرکاری ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سونہ مرگ میں محکمہ سیاحت کی طرف سے 8جنوری کو منعقد ہورہے فیسٹول کیلئے تیاریاں شروع کی جاچکی ہیں۔ سیکریٹری سیاحت سرمد حفیظ نے اس سلسلے میں کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ امسال سونہ مرگ کو موسم سرما کے دوران کھلا رکھنے سے قبل ہی سونہ مرگ ہوٹلیئرس کے ساتھ ایک میٹنگ کی گئی ہے جس میں اُن سے کہا گیا ھے کہ وہ اپنے ہوٹلوں میں گرمی کا انتظام رکھیں تاکہ یہاں آنے والے سیاحوں کو کسی قسم کے مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔انہوں نے کہا کہ سونہ مرگ میں موسم سرما کے دوران جواہر انسٹچیوٹ آف ماؤٹینرنگ پہلی بار چھ  سیکنگ  کورس کررہا ہے اور محکمہ سیاحت بھی سلیج کورس کے علاوہ اور سیکنگ کورس کرنے جارہا ہے۔موسم سرما کے دوران سونہ مرگ کو بھاری برفباری کی وجہ سے آمدورفت کے لئے بند کیا جاتا تھا جس کی وجہ سے سونہ مرگ کا رابطہ ضلع گاندربل کے ساتھ قریب پانچ ماہ تک منقطع رہتا تھا ۔