سونہ مرگ طبی سنٹر میں سہولیات کا فقدان لاکھوں روپئے کی مشینری زنگ آلودہ

غلام نبی رینہ

کنگن// سونہ مرگ میں قائم پرائمری ہیلتھ سنٹر میں طبی سہولیات کے فقدان کی وجہ سے مریضوں کو مشکلات کا سامنا کرناپڑتا ہے۔طبی مرکز میں نصب لاکھوں روپئے کی مشینری زنگ آلودہ ہوچکی ہے۔ اگرچہ حکومت نے مریضوں کی سہولیات کیلئے ایکسرے مشین، ای سی جی مشین ،ڈینٹل سامان اورلیبارٹری سامان کے علاوہ معمولی جراہی کا سامان دستیاب رکھا ہے لیکن محکمہ صحت کی طرف سے اس کو چلانے کے لئے عملے کو تعینات نہیں رکھا ہے جس کی وجہ سے ہسپتال میں آنے والے مریضوں کو ایکسرے ای سی جی کے علاوہ معمولی ٹسٹ کرانے کے لئے کنگن ہسپتال منتقل کیا جاتا ہے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ اگرچہ موسم سرما کے دوران ڈینٹل سرجن، لیبارٹری ٹیکنشن، ایکسرے ٹیکنشن کو تعینات کیا گیا تھا لیکن موسم بہار شروع ہونے کے ساتھ ہی ان کو اپنی اپنی جگہوں پر واپس تعینات کیا گیا ۔ اگرچہ صحت افزا مقام سونہ مرگ میں روزانہ ہزاروں کی تعداد میں سیاحوں اور عام لوگوں کی آمد رہتی ہے اور اس دوران اگرچہ کسی سیاح یا مقامی شہری کو ایکسرے کا مشورہ دیا جاتا ہے تو اسے کنگن ہسپتال یا نجی کلنکوں کا رخ کرنا پڑتا ہے۔ مقامی لوگوں نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا اور ضلع ترقیاتی کمشنر گاندربل سے مطالبہ کیا ہے کہ سونہ مرگ ہسپتال میں عملے کو تعینات کیا جائے ۔ چیف میڈیکل افسر گاندربل ڈاکٹر افروزہ نے اس سلسلے میں کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ انہوں نے اس معاملے کو ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز اور ضلع ترقیاتی کمشنر گاندربل کی نوٹس میں لایا ہے۔