سول سیکرٹریٹ میں مرکزی ٹیم کی اعلیٰ افسران کے ساتھ میٹنگ

سرینگر// آیوگ این آئی ٹی آئی حکومت ہند کے ممبر ڈاکٹر وِنود کمار پال نے ڈائریکٹر نیشنل سینٹر ڈیزیز کنٹرول (این سی ڈی سی) نئی دہلی ڈاکٹر ایس کے سنگھ کے ساتھ کل یہاںجموں و کشمیر کے مرکزی خطے میں کووِڈ۔19 مرض کی روکتھام کے لئے اِقدامات کا جائزہ لینے کے لئے سول سیکرٹریٹ میںمیٹنگ کی صدارت کی۔ میٹنگ میں صحت و طبی تعلیم کے فائنانشل کمشنر اتل ڈولو، ضلع ترقیاتی کمشنر سری نگر ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری ، منیجنگ ڈائریکٹر این ایچ ایم بھوپند ر کمار ، جے کے ایم ایس سی ایل کے منیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر یشپال شرما ، ڈائریکٹر سکمز (ایس کے آئی ایم ایس) صورہ سری نگر ، پرنسپل جی ایم سی سری نگر ، ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر اور متعلقہ محکمہ کے دیگر اعلی اَفسران بھی موجود تھے۔جموں وکشمیر یونین ٹریٹری کے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں نے متعلقہ شراکت داروں کے ساتھ اپنے اپنے ہیڈ کوارٹروںمیں بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ میٹنگ میں شرکت کی اور انہیں کووِڈمریض ، قرنطین مرکز اور کووِڈ مراکزکی روزانہ کی تفصیلات کے علاوہ کووِڈ کے روکتھام پر قابو پانے کے اِقدامات کے بارے میں مفصل جانکاری دی۔کووِڈ۔19 وَباکی روکتھام کے لئے محکمہ صحت اور ضلعی انتظامیہ کی حکمت عملی اور پیرا میٹر س کا جائزہ لیتے ہوئے ممبر نے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں پر زور دیا کہ کووِڈ معاملات کی جلد پتہ لگانے اور انفیکشن کو مزید پھیلنے پر قابو پانے کے لئے مؤثر حکمت عملی مرتب کرنے کی ضرورت ہے ۔اُنہوں نے جموںوکشمیر یوٹی میں داخل ہونے والے مسافروں کی صد فیصد جانچ کو یقینی بنانے کے لئے جموں و کشمیر اِنتظامیہ کی کوششوں کی تعریف کی۔ممبر اور ڈائریکٹر نے ڈپٹی کمشنروںپر زور دیا کہ وہ ریڈ زون اور کنٹین منٹ علاقوں کو دوبارہ ترتیب دیں تاکہ دوسرے علاقوں میں بیماری کے انفیکشن کومزید پھیلنے سے روکا جاسکے۔ اُنہوں نے کہا کہ دیہی علاقوں میں انفیکشن کے روکتھام کے لئے دیہی حکمت عملی اَپنانے کے لئے ضروری اِقدامات اُٹھائیں تاکہ وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پایا جاسکے۔ڈاکٹروِنود کمار پال اورایس کے سنگھ نے متعلقہ حکام پر زور دیا کہ کووِڈ مثبت مریض کے رابطے میں آئے کم سے کم 15 اَفراد کے نمونے لے کر کووِڈ ٹیسٹ کیاجائے تاکہ کووِڈ چین توڑنے میں مدد مل کر دوسرے لوگوں کی حفاظت یقینی بنائی جاسکے۔اُنہوں نے متعلقہ حکام پر زور دیا کہ ضلعی سطح کی ٹیموں کومزید مستحکم بنایا جائے جو کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے سے نمٹنے کے لئے کام کرتی ہیںتاکہ کووِڈ مثبت معاملات مریضوں کو علاج ومعالجہ بروقت یقینی بنایا جاسکے۔اُنہوں نے متعلقین پر زور دیا کہ کووِڈ۔ 19 کے حوالے سے اِن مراکز میں صحت سہولیات کی کمیوں اور خامیوں کا پتہ لگانے کے لئے تمام کووِڈ مراکز کا آڈِٹ کیا جائے تاکہ کووِڈمریض کو علاج ومعالجہ کے دوران کسی مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے۔صحت و طبی تعلیم کے فائنانشل کمشنر نے ممبر اور ڈائریکٹر کو بطور مومنٹو کافی ٹیبل بُک پیش کیا۔