سول سوسائٹی رام بن کا احتجاجی مارچ

رام بن //رام بن میں کیندریہ ودیالیہ اور جواہر نو اودیہ ودیالیہ قائم کرنے میں مبینہ تاخیر کے خلاف سول سوسائٹی کے ممبران نے ایک احتجاجی مارچ نکالا ۔مظاہرین کا الزام تھا کہ سابقہ سرکار نے رام بن ضلع کے لئے جواہر نو اودیہ ودیالیہ منظور کیا تھااور سکی تعمیر کے لئے سناسر میں اراضی کی نشاندہی کی گئی تھی۔انہوں نے الزام لگایا کہ سرکار سیشن2018 کیلئے کلاسز شروع کرنے میں ناکام رہے ،حالانکہ اکیڈمک سیشن2018 کے لئے40طلاب کو منتخب کیا گیا تھالیکن تا دم حُکام کی جانب سے کلاسز شروع کرنے کے سلسلہ میں کوئی رد عمل نہیں دکھایا ہے۔سول سوسائٹی کے ایک ممبر پون کمارنے کہا کہ ضلع کے مختلف علاقوں سے سلیکشن عمل مکمل کرنے کے بعد 40 طلاب کو منتخب کیا گیا اور تب سے ہم کلاسز شروع ہونے کا انتظار کر رہے ہیں۔اس سے قبل سول سوسائٹی ممبران کے ایک وفد نے ضلع ترقیاتی کمشنر شوکت اعجاز بٹ کے ساتھ ملاقات کی اور انہیں یہ مسئلہ حل کرنے کی اپیل کی۔مظاہرین نے گورنر اور انتظامیہ سے مداخلت کرکے لوگوں کے اس مطالبہ کو حل کرنے کی اپیل کی ہے۔